“پاکستان آئڈل” اور ہم مسلماں

1

“پاکستان آئڈل” اور ہم مسلماں

عذاب میڈیا کا اہم کردار ہے

ہمارے با شعور نوجوانوں کو گمراہی اور مذہب سے دور کئے جانے میں اس آزاد ۔۔۔یا عذاب میڈیا کا اہم کردار ہے ۔اس لابی کا شکار نوجوان مذہب سے دور ہوتا جارہا ہے ۔اسلام دشمن عناصر خوفزدہ ہیں انہوں نے میڈیا کو اپنا مہرہ بنایا ہوا ہے جس کی ایک مثال ناچ گانوں پر مبنی پروگرام پاکستان آئڈل”ہے ۔(یہاں آئڈل سے مراد بت ہے)

ہندو مذہب میں بتوں “آئڈل”کو خدا سمجھا جاتا ہے۔ناچ گانے ان کے مذہب میں شامل ہے اگر وہ اپنے پروگرام کو بتوں کے نام پر رکھ کر نوجوانوں میں موسیقی کا شعور پیدا کرتے ہیں تو کوئی بڑی بات نہیں۔۔۔مگر جب یہ رجحان اسلامی مملکت میں میڈیا لے کر آئے گا تو اسے کیا کہا جائے گا؟؟ یہ اسلام دوستی ہے یا اسلام دشمنی ؟؟ سلطان صلاح الدین ایوبی کا قول ہے “جس قوم کو تباہ کرنا ہو انکے نوجوانوں میں فحاشی پھیلا دو”اور تاریخ گواہ ہے کہ جو بھی قومیں تباہ ہوئیں ان کا سبب فحاشی ہی تھی ۔ ۔۔ امت مسلمہ کے غیور نوجوانوں نے جب جب فحاشی اور عریانی کے بتوں کو پاﺅں تلے روندھا ہے دنیا نے خود ان کا استقبال کیا ہے اسلام ہمیشہ غالب رہا ہے اور کفر و باطل کے ایوانوں میں آگ لگا دی ہے لشکر اسلام کے سپہ سالار خالد بن ولید ہوں یا ابوعبیدہ بن جرح اہل کفار کی صفوں میں گھس کر دل و جان سے شہادت کی تمنا کرتے رہے۔

فحاشی و عریانی کے سیلابوں سے دامن بچاتے ہوئے اس قافلے میں شامل ہر فرد کا دشمن پر رعب ہوتا تھا اور ملک پر ملک فتح کرتے تھے۔ سلطان صلاح الدین ایوبی ہوں محمود غزنوی ہوں یا محمد بن قاسم یہ اسلام کے ہیرو گزرے ہیں لیکن آج کا نوجوان امت کے ان بہادر شیروں کے بجائے مغربی اداکاروں کو اپنا آئیڈل بنا رہے ہیں ۔

مسجدیں ویران ہیں فحاشی و عریانی کا سیلاب ہے میوزیکل کیسرٹ ،فیشن شوز او دیگر بیہودہ رسم و رواج نے امت کے غیور نوجوانوں کو کھوکھلا کر رکھا ہے آج امت کے نو جوانوں پر نظر دوڑا کر دل خون کے آنسو روتا ہے گویا کہ ہم اسی سفرکے مصداق بن گئے ہیں۔

وضح میں تم نصارہ تو تمدن میں ہوں

یہ مسلماں ہے جنہیں دیکھ کر شرمائے یہود

عروسہ شاہ

uroosa77@hotmail.com

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: