پردہ – نعیم امین

ماں پچھلے تین دنوں سے بیمار تھی، قریبی میڈیکل اسٹور سے وہ معمول کے مطابق کھانسی کا سیرپ لا کر پلا چکا تھا لیکن اب کی بار کھانسی جانے کا نام ہی نہیں لے رہی تھی۔ کھانستی ماں تھی لیکن ..مزید پڑھیں

جامِ بے طلب از شفا ہما (ناول) – باب پنجم – قسط نمبر45

سفید اسکارف میں چمچماتا ہوا وہ چہرہ اور نائلہ کی آنکھوں سے گرتے آنسو۔۔۔۔۔بہت کُچھ اسکے لیے نا قابل برداشت تھا، ”ہاں۔۔۔سر۔۔بلکل میں پہچان لوں گا۔۔۔۔!!“ ”گُڈ۔۔۔!!“وہ بہت کُچھ سوچ چکا تھا،اسکی آنکھیں ایک لمحہ کے لیے چمکی تھیں، ”لیکن ..مزید پڑھیں

جامِ بے طلب از شفا ہما (ناول) – باب پنجم – قسط نمبر42

تب ہی قاسم کی کار کا ہارن اسکی سماعتوں سے ٹکرایا تھا وہ اس آواز کو پہچانتی تھی۔۔۔لبوں پر پھر ایک بار مسکراہٹ بکھر گئی۔۔۔۔، بہت تیزی سے سیڑھیاں پھلانگ کرنیچے پہنچی۔۔۔۔۔تو چوکیدار نے اُٹھ کر دروازہ کھولا۔۔۔۔، وہ باہر ..مزید پڑھیں