نعتَ رسول مقبول

لو مدینے کی تجلی سے لگائے ہوئے ہیں دل کو ہم مطلع انوار بنائے ہوئے ہیںاک جھلک آج دکھا گنبد خضرٰی کے مکیں کچھ بھی ہیں ، دور سے دیدار کو آئے ہوئے ہیں سر پہ رکھ دیجے ذرا دستِ ..مزید پڑھیں

نعت رسول مقبول

3 hours ago کچھ نہیں مانگتا شاہوں سے یہ شیدا تیرا اس کی دولت ھے فقط نقشِ کفِ پا تیرا تہ بہ تہ تیرگیاں ذہن پہ جب لوٹتی ہیں نور ہو جاتا ھے کچھ اور ہویدا تیرا کچھ نہیں سُوجھتا ..مزید پڑھیں