جمعہ نمازِعصر کے وقت ہر دعا کی قبولیت کا وظیفہ




آج ہم آپ کو ایک ایسا عمل بتائیں گے جو کہ آپ نے اس وقت کر نا ہے جس کے بارے میں جس کے بارے میں حضور نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ بندہ جو بھی دعا کر ے گا اللہ تعالیٰ ضرور قبول فر ما ئے گا ۔رسول اللہ ﷺ نے جمعہ کے دن کا ذکر کیا اور فر ما یا اس میں ایک گھڑی ایسی ہے جس میں

کو ئی مسلمان نماز پڑھے اور اللہ سے کچھ مانگے تو اللہ تعالیٰ اس کو عنایت فر ما دیتا ہے اور ہاتھ کے اشارے سے آپ ﷺ نے واضح فر مایا کہ وہ ساعت مختصر سی ہیں۔ ایک اور حدیث ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فر ما یا وہ گھڑی خطبہ شروع ہونے سے لے کر نماز کے ختم ہونے کا درمیانی وقت ہے۔ بحوالہ مسلم شریف ایک اور حدیث میں رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فر ما یا جمعہ کے دن ایک گھڑی ایسی ہو تی ہے کہ مسلمان بندہ جو مانگتا ہے اللہ اسے عطا فر ما دیتے ہیں اور وہ گھڑی عصر کے بعد ہو تی ہے۔ دیگر احادیث کی روشنی میں قبو لیت والی گھڑی کے متعلق علماء نے دو وقتوں کی تاکید کی ہے نمبر ایک دونوں خطبوں کے درمیانی وقت جب امام ممبر پر کچھ لمحات کے لیے بیٹھتا ہے اور دوسرا غروبِ آفتاب سے کچھ وقت پہلے ، یاد رہے کہ آپ نے دعا کرنی ہے آپ کی جو بھی حاجت ہے جو بھی مشکل ہے اس کے لیے دعا کر یں جن لوگوں کا رزق کا کوئی معاملہ ہے یا رزق میں بر کت نہیں ہے وہ رزق کے لیے دعا کر یں جن لوگوں کے ہاں اولاد نہیں ہے وہ اولاد کے لیے دعا کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں