دعا کی اہمیت – فضیلہ سموں




بس میں سوار ہو کر وہ فلسطین کے لیے کیے جانے والے مارچ میں جا رہے تھے ۔۔ ذہن میں مسلسل خیال آ رہے تھے کہ اس مارچ کو کیسے کار آمد اور پر نتائج بنایا جاۓ۔ ۔ تب اسے غزوہ بدر کا موقعہ یاد آیا۔ ۔ آپ صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے اپنے جان نثا روں کے ہم راہ مو موجودہ سا ز و سامان تیا ر کر کے جہاد کے لیے تیاری مکمل کر لی تھی اپنا جو کچھ تھا وہ پیش کر دیا

اب اللہ کے حضور ارشاد فرماتے ہیں مفہوم ہے کہ: اے ربِ ذلجلال ہم اپنی موجودہ طاقت لے کر آپکی خاطر ۔۔دین کی سر بلندی کے لیے حاضر ہیں آج اگر یہ مٹھی بھر مسلمان کفار سے ہار گئے تو آپکا نام لینے والا کوئ نہیں بچے گا اب آپ پر ہے چاہے تو انہیں سرفراز کر دیں چاہے تو ان کا نام و نشا ن مٹا دیں۔۔۔۔۔ آپ صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے اپنی تیاری کے بعد اپنے سازوسامان میں دعا کی طاقت کو ملایا تھا جو سب سے طاقتور ثابت ہوئ تھی۔۔ اسے سمجھ آیا تھا کہ اپنا سب کچھ لگا کر بھی دعا کی ضرورت پڑتی ہے۔۔ پھر ہم تو منتشر ہیں ہمیں کتنی دعائیں مانگنی چائییں۔۔۔ تو آئیے کوششوں میں دعاؤں کی طا قت ملاتے ہیں۔۔ آج اسرائیل اپنی بھر پور طاقت لیے ہوۓ غزہ پر قابض ہے اے ربِ ذلجلال تیرے شیر، ہر دل عزیز بندے اپنا مال اپنی جان اپنا گھر بار اپنی ہر چیز لٹا ۓ وہاں صرف تیرا نام لے کر بیٹھے ہیں ، تیرے وہ شیر جو ان کے ہمسر ہو کر تیرا نام لے کر اپنے شیر بھائیوں کا ساتھ دینا چاہتے ہیں ان میں وہاں پہنچنے کی سکت نہیں، جن میں سکت ہے ان میں بز دلی اور دنیا کی محبت اور لا لچ بھری ہوئ ہے۔۔ اے ربِ زلجلال اپنے کمزور بے سکت بندوں کو اس قابل بنا کے وہ تیرے دن کے لیے خود کو مکمل طور پر صرف کر سکیں ہماری ٹوٹی پھوٹی کو ششوں کو مکمل کر کے دین کو سر بلندی عطا فرماں سوئ ہو ئ امت کی غیرت ،ان کے ایمان کو جگا دے یا رب ۔۔

تیرے شیر دل بندے جو وہاں سامنے سیسہ پلائ ہوئ دیوار بنے ہوۓ ہیں تو ان اپنی طاقت کوان کا بازو بنا دے یا رب تو انہیں تیرے مقصد میں کامیاب کر اے ربِ ذلجلال !! تو کفار کو نیست و نابود کر دے تو با طل کو نیست و نابو د کر دے تو امتِ مسلمہ کو متحد کر دے اے ربِ کا ئنات .. تو اس ریلی کو وہ چنگا ری بنا جو نظام باطل کو دہلا کے رکھ دے جو سوۓ ہوۓ حکمرانوں کی غیرت جگا دے تو ہمارا گھروں سے نکلنا جہاد کے مترادف کر اور ہر مسلماں مرد ،عورت، بچے کے بدلے اپنے فرشتوں اور چھپی ہو ئ طاقتوں کے ساتھ اہل فلسطین کی مدد فرما۔۔ قبلہ اول کی حفاظت فرما یا الله ۔۔ مسجد اقصیٰ کے تقدس کو پامال ہونے سے بچا لے یا رب۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں