بلاعنوان – ہبہ احمد صمد خان




غلطیوں کو خود سے نکال کر
نہ اس میں کچھ ملال کر
نہیں ملا جو ،تو وہ نہ ملے
جو مل گیا اسے رکھ سنبھال کر
راہ خدا میں لگا اپنا ہنر
جو نہیں ہنر ،وہ دیکھا کہ کمال کر
غصہ، نہیں ہے سنت نبی
ہر چیز پہ اب یوں نہ جلال کر
اپنے لفظوں کے تیر سے
کسی کی زندگی نہ محال کر
سارے عالم میں جو چھایا ہوا
نہ ناراض کرنے کی اس کو مجال کر
ہر شب سیاہ رات سے قبل
نفس کو خود ہی کھنگال کر
کہ اندھیروں کو مٹا کے
اب وہ بہار لازوال کر
عادت نبی کے سانچے میں ڈھال کر
اپنی زندگی اب یوں جمال کر

اپنا تبصرہ بھیجیں