159

اردوان کی جیت اور مسلم امہ – مُحمّد حَسّان

استنبول کے نتائج تاخیر کا شکار ہو گئے ۔۔۔
وفا شعار دوستوں کے کلوز گروپ میں چیٹ زوروں پر تھی ، ترک بلدیاتی الیکشن کے نتائج پر لمحہ بہ لمحہ اپ ڈیٹس حاصل کی جارہی تھیں ،مختصر تجزیے اور تبصرے بھی جاری تھے

رات پونے دو بجے بن علی یلدرم کی جیت کے اعلان پر اطمینان ہوا اور ترکی میں موجود آرٹی ای اردو کے ایگزیکٹو ایڈیٹر غلام اصغر ساجد کو شب بخیر کہا ۔ سوتے وقت خیال آیا کہ کبھی پاکستان کے الیکشن میں اتنی دلچسپی نہیں لی ۔۔ اپنی اس بے چینی پر خود ہی زیر لب مسکرایا ۔۔یاد آیا کہ رجب طیب اردوغان کی صدارتی الیکشن کے موقع پر عمرے پر موجود تھا ،اور الیکشن کے دن دوران طواف بھی ایردوغان کی فتح کیلئے دعا کی تھی .
صبح اٹھا تو معلوم ہوا کہ اردوغان کی آق پارٹی اپنی اتحادی جماعت کے ساتھ ملک میں 51 فیصد اکثریت لے کر فتح یاب ہو چکی ۔ جبکہ استنبول میں ٹائی پڑ گیا اور انقرہ ہاتھ سے نکل گیا ۔۔ ایسے میں ایک تصویر نظر سے گزری کہ اردوغان کی جیت پر غزہ میں فلسطینی جشن منا رہے ہیں ۔۔ اور انقرہ میں شکست پر پاکستان سمیت دنیا بھر کے لبرلز خوشی سے مخمور ہیں ۔۔ اردوغان میں دلچسپی لینے پر معترض دوستوں کو جواب مل چکا ہوگا ۔۔
ہم ایردوغان کی جیت کے آرزو مند اس لئے ہوتے ہیں کہ اس کی جیت سے دنیا بھر کے مظلوم مسلمانوں کو امید اور اپنائیت کا احساس دلاتی ہے اور ہمیں اپنی مظلوم اُمّت کا یہ احساس عزیز ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply