Home » ماں – انعم حسین
ادب

ماں – انعم حسین

ماں ہے تو زندگی ہے
ماں کے ہونے سے ہی تو
زندگی حسین ہے
ماں گھر کا وہ روشن چراغ ہے
جس کے بجھ جانے سے
گھر ویران سا ہوجاتا ہے
ماں زندگی ہے
ماں سکون ہے

ماں سب سے اچھی دوست ہے
ماں سب سے بہترین ساتھی ہے
ہر دکھ،ہر غم اور ہر خوشی میں
ماں خوبصورت پھول ہے
جس کی خوشبو گلاب کے پھول
کی طرح گھر میں مہکتی ہے
یہ مہک جب نہ آئے تو زندگی
الجھی الجھی سی ہوئی لگتی ہے
ماں کی وہ خوبصورت مسکراہٹ
میرے دل کا چین اور سکون ہے
ماں کی آواز گھر کی رونق ہے
ہر وہ لمحہ جس میں مسکراتی ہے

میری ماں وہ پل مجھے
اپنی جان سے بھی زیادہ عزیز ہیں
رب وہ لمحے ہمیشہ قائم رکھے
جن لمحوں میں میری ماں
کے چہرے پہ خوشی کھلتی ہے
جب ان کے لبوں پہ
مسکراہٹ بکھرتی ہے
ماں اپنی مسکراہٹ کے پیچھے
کتنے دکھ چھپاتی ہے
ماں ایک بہت ہی عظیم ہستی ہے
جو خود کانٹوں سے گزر کر
ہر طوفان سے لڑ کر
ہمیں کوئی تکلیف اور آنچ نہیں
آنے دیتی

واقعی!!
ماں ایک بہت ہی
عظیم ہستی ہے
جب ہی تو خدا نے اس کے پیروں تلے
جنت رکھی ہے
اس جنت کو مت گنوانا کبھی!!
اپنی ماں کی قدر کرنا،
ساری زندگی ان کی خدمت کرنا!!
جن کے ساتھ ماں کا ساتھ نہیں
ان سے پوچھو
کیا ان کا اک لمحہ
بھی ماں کے یاد کے بغیر گزرتا ہے؟
کونسا وہ پل ہے ان کا
جو ماں کی یاد ہے بغیر گزرتا ہے؟
اب تم خود سوچو
ماں کا کیا کوئی دن ہوگا؟

تم کہتے ہو ماوں کا عالمی دن
میں کہتی ہوں ماں کے بغیر
اک لمحہ نہیں گزرتا
ماں کا کوئی دن نہیں ہوتا
ماں سے ہی ہر دن ہوتا ہے
ہر دن ماں کا ہے
کوئی اک نہیں!!

Add Comment

Click here to post a comment