مقصد زندگی – بنت شیروانی




فریحہ ڈرائنگ روم سے اڑی اور باورچی خانہ میں اتری جہاں اسے دو گھنٹے گزارنے تھے اور اس کے بعد اس کی فلاءٹ بیڈ روم جانے کی تھی۰
ان دوگھنٹوں کو اچھا گزارنے کے لۓ کہ اس وقت میں بوریت کا احساس نہ ہو فریحہ نے کچھ گیندیں بنانے کا سوچا تھا ۰لہذا اس نے سبزیوں کی ٹوکری اٹھائ اور ان سبزیوں کو گیندوں کی شکل دینے میں جُت گئ۰اس کے بعد اس نے پیاز کو چھیل کاٹ کر اسے تیل کی جھیل کے مزے دلوانے کا سوچا۰اسی اثناء میں اسے اپنے ایک عدد رشتہ درا کی فکر ہوئ۰کیونکہ اگر یہ رشتہ دار خفگی کا اظہار کر لیتا تو فریحہ کو بڑی پریشانی اٹھانی پڑتی تھی۰اور فریحہ کے اس رشتہ دار کی فریحہ سے بس ایک ڈیمانڈ تھی اور وہ یہ کہ وقتا فوقتا اس کی “پانی “سے تواضع کرتی رہے۰لہذا فریحہ نے پانی پیا اور اپنے قریبی رشتہ دار یعنی “گردہ “کو خوش کرنے کی کوشش کی۰اب وہ پیاز کو تیل کی جھیل میں مزے دلوا رہی تھی۰اور کڑ کڑی ہوتی پیاز کو دیکھ کر اسے بچپن میں کھاۓ پاپڑ یاد آرہے تھے۰اور اس یاد میں اس کے منہ میں پانی بھر آیا تھا۰
خیر پاپڑ کی طرح کرپسی کر سپی پیاز کے ساتھ اب فریحہ نے اپنے ہاتھوں کی ورزش کرانے کرانے کا سوچا اور انھیں ہاون دستے میں ڈالا۰اس ورزش سے جب فریحہ کو تھوڑی تھکن کا احساس ہوا تو اسے اپنی امی کی بات یاد آئ کہ بیٹا کبھی باورچی خانہ کے کاموں سے نہ گبھرانا ۰اللہ برکت دے کمانے والوں کے رزق میں کہ وہ کما کر لاتے ہیں تو ہم باورچی خانہ میں شغل بازی کر لیتے ہیں۰اور اللہ زندگیاں دے صحت کے ساتھ گھر کے افراد کو کہ انسان ہیں تو کام ہیں …… اس سوچ کا آنا تھا کہ فریحہ کو کاموں میں مزید دلچسپی پیدا ہوئ۰
اب فریحہ نے تھوڑے سے تیل میں دہی ،پیاز اور مصالحوں کو ملا ڈالا۰اور اسی میں ان سبزیوں کی گیندوں کو بھی احتیاط کے ساتھ رکھ دیا۰۰اس وقت یہ تمام چیزیں ایک خوشی کا اظہار کر رہی تھیں کہ ہم سب چیزیں آپس میں ملنے کے لۓ بے چین تھیں ۰شکریہ فریحہ باجی آپ نے ہماری یہ خواہش پوری کر دی۰ اور اب ہم اپنا مقصد زندگی کہ “آپ انسانوں کی خاطر مدارت کرنا” اسے پورا کر سکیں گے۰
اور فریحہ سوچ رہی تھی کہ جس طرح آج یہ پیاز ،دہی ،مصالحے اور سبزیوں کے کوفتے آپس میں مل گۓ ہیں اسی طرح جلد ہی اس وبا کے ختم ہونے پر وہ اپنی پیاری پیاری دوستوں اور رشتہ داروں سے ملے گی اور اپنا مقصد زندگی بہتر طریقے سے ادا کرے گی۰

اپنا تبصرہ بھیجیں