میری پیاری جمیعت سالگرہ مبارک




22
مصنف : یاسر خان کھوسوـــــــ رفیق اسلامی جمیعت طلبہ پاکستان
جب پہلی دفعہ میں نے جمیعت کے پروگرام کا سنا تو ابو نے کہا کہ پروگرام میں جاؤ! چانک تیاری ہوئی،مجھے جمیعت کے بارے میں کچھ بھی پتہ نہیں تھا- راستے میں ناظم صاحب نے بہت کچھ بتایا-اور ابو نے بتایا کہ میں جمیعت میں سابق ناظم ضلع رہا- پھر ہم تین روزہ کیمپ میں لاڑکانہ گئے-وہاں بہت کچھ سیکھا،اچھے دوست بھی ملے-پھر میں نےسید ابو الاعلیٰ مودودی پہ تحقیق کی-تفہیم القرآن اور انکی دیگر کتابیں پڑھیں-وقت کے ساتھ ساتھ مجھے جمیعت  سے لگاؤ ہوتا گیا اور پھر میں جمیعت کا رفیق بنا-مجھے اور تنظیموں کی طرف سے بھی دعوت ملی-مگر میں نے کہا —-صرف جمیعت- مجھے جمیعت کے ساتھ پہ فخر ہے-اور ہم جب بھی چاہیں اپنے ناظمین سے رابطہ کرسکتے ہیں-ہمیں جواب ملتا ہے–یہاں تک کہ خط لکھیں تو اسکا بھی جواب ملتا ہے-
میں آپ سب طلباء کو جمیعت میں آنے کی دعوت دیتا ہوں-یہ ایک ہمہ گیر تنظیم ہے،اسمیں کوئی فرقہ واریت نہیں-اسمیں سنّی بھی ہیں اور دیو بندی بھی-کوئی اختلاف نہیں- صرف اسلام ہی مطمع نظر ہے-
 

اپنا تبصرہ بھیجیں