جمعیت میری محسن




مصنف : ریاض صدیقی
الحمد للہ آج اسلامی جمعیت طلبہ جراتوں ، عزیمتوں ، قربانیوں کی لازاوال داستانیں اپنے دامن میں سمیٹے 66 سال مکمل کر کے 67 سال میں قدم رکھ رہی ہے ۔۔ مجھے بھی اللہ رب العزت نے توفیق دی اور میں اس میں شامل ہوا ۔۔۔ بزم ساتھی سے کام کا آغاز کیا اور کراچی جمعیت کے سیکریٹری اطلاعات کی آخری ذمہ داری سے فروری 2009 میں جمعیت سے فراغت ہوئی ۔۔۔
ایک ایک لمحہ آج بھی یاد ہے ، ۔۔۔۔ اللہ رب العزت کا لاکھ لاکھ شکر ادا کرتا ہوں کہ حلقہ ، کالج ، جامعہ کراچی ، مرکز ہر جگہ محبت کرنے والے ذمہ داران اور ساتھیوں کے ساتھ رکھا ۔۔۔ ایک دوسرے پر جان قربان کرنے والے، اپنے غموں کو چھپا کر ساتھیوں کی خوشی کا خیال رکھنے والے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ شہید ساتھی واصف عزیز ، محسن اختر، اسامہ آدم ، عبد الجبار کے ساتھ گذرے ہوئے لمحات یاد آتے ہیں اور ان جیسے دیگر شہداء جمعیت جنہوں نے اپنے خون سے اس گلشن کی آبیاری کی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ہفتہ کتب کا ایک واقعہ جو ہمیشہ یاد آتا ہے اور اکثر اس طرح کے لوگ ساتھیوں کو اس مہم میں مل جاتے ہیں ہمارے ساتھ ایک دوسرے گروپ کو بھی ایک صاحب آئی آئی چند ریگر روڈ میں آفسز میں کلیکشن کے دوران ملے جنہوں نے خود آ کر ایک بڑی رقم ہفتہ کتب فنڈ میں دی اور کہا کہ ” میری پوری تعلیم کا خرچہ جمعیت نے کیا جمعیت کا مجھ پر احسان ہے
” ۔۔۔ جمعیت پر لوگ کس قدر اعتماد کرتے ہین اس کا بھی ایک واقعہ یاد آتا ہے جب جامعہ کراچی میں ایڈمیشن مہم کے دوران سلور جوبلی گیٹ پر لگے جمعیت کے اسٹال پر ایک صاحب اپنی بیٹی کے ساتھ آتے ہیں اور کہتے ہیں کہ ” جامعہ کے ماحول کا مجھے معلوم ہے مگر صرف جمعیت کی وجہ سے اپنی بیٹی کا داخلہ جامعہ کراچی میں کروا رہا ہوں ” ۔۔
جمعیت کے ناظمیں یاد آتے ہیں جو سخت حالات میں خود سب سے آگے آگے ہوتے تھے ۔۔۔ کسی بھی آزمائش میں خود سب سے پہلے کودتے تھے ۔۔۔ شاید میں جمعیت میں نہ ہوتا تو جامعہ کراچی سے ماسٹرز بھی نہیں کرسکتا ، جامعہ کراچی سے ماسٹرز کے بعد جامعہ اردو میں ابلاغ عامہ میں ماسٹرز میں داخلہ بھی نظم جمعیت کے کہنے پر لیا ۔۔۔۔ واصف عزیز شہید ابلاغ عامہ میں میرے کلاس فیلو تھے ۔۔ حقیقت میں میں آج جس مقام پر ہوں اس کا کریڈٹ جمعیت کو ہی دیتا ہوں ، جمعیت ہی میری محسن ہے ۔۔۔ اور ہزاروں لاکھوں نوجوانوں کی بھی محسن ہے جنہوں نے اس سے بہت کچھ سیکھا ۔۔۔۔ جمعیت کی تعریف اتنی کہ الفاظ ساتھ نہیں دیتے ۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں