براڈ شیٹ کے حق میں برطانوی ہائی کورٹ کا نیا حکم جاری –




لندن: براڈ شیٹ کے حق میں برطانوی ہائی کورٹ نے نیا حکم جاری کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی ہائی کورٹ نے براڈ شیٹ کمپنی کے حق میں نیا حکم جاری کر دیا، عدالت نے براڈ شیٹ کو فریزنگ آرڈر نیب اور اٹارنی جنرل دفاتر پہنچانے کی اجازت دے دی۔

براڈ شیٹ کمپنی نے 10 لاکھ پاؤنڈ کی بقایا رقم کے لیے برطانوی ہائی کورٹ سے رابطہ کیا تھا، جب کہ برطانیہ میں نیب کے وکلا براڈ شیٹ کو جواب نہیں دے رہے تھے، ایلن اینڈ اووری کے فعال نہ ہونے کے سبب نمائندگی نہیں تھی۔

برطانوی ہائی کورٹ پہلے ہی پاکستانی اکاؤنٹس منجمد کرنے کے احکامات جاری کر چکا ہے، نیا حکم ہائی کورٹ کے ماسٹر ڈویژن کے کمرشل کورٹ نے جاری کیا ہے۔

براڈ شیٹ انکوائری کمیشن رپورٹ کے مزید مندرجات سامنے آ گئے

براڈ شیٹ کی درخواست پر تھرڈ پارٹی ڈیبٹ آرڈر کی سماعت 30 جولائی کو ہوگی، کاوے موساوی کا کہنا ہے کہ پاکستان میں رواں ہفتہ متعلقہ اداروں کو عدالتی حکم مل جائے گا۔

واضح رہے کہ پاکستان دسمبر 2020 میں براڈ شیٹ کو 28 ملین ڈالر کی رقم ادا کر چکا ہے۔

اس کیس میں پاکستان میں جسٹس ریٹائرڈ عظمت سعید شیخ کی سربراہی میں ایک کمیشن قائم کیا گیا ہے، جس نے رواں ماہ 23 تاریخ کو رپورٹ میں انکشاف کیا کہ براڈ ‏شیٹ کمپنی کو 15 لاکھ ڈالر کی ادائیگی کا ریکارڈ غائب ہے، یہ ادائیگی غلط طور پر کی گئی تھی، اور اس کے لیے ذمہ دار سابق ڈپٹی ہائی کمشنر عبدالباسط تھے۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں