China and Oman agree to enhance ties







چین اور عمان نے دوطرفہ تعاون بڑھانے اور خلیج تعاون کونسل کے دیگر ممبر ممالک کے ساتھ فری ٹریڈ زون مذاکرات کو آگے بڑھانے پر اتفاق کیا ہے۔

عمان ٹائمز کے مطابق چینی ریاستی کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ یی اور عمانی وزیر خارجہ سید بدر بن حماد البصیدی نے مسقط میں ملاقات کی۔ دونوں وزراء نے ویزا فری معاہدے پر دستخط کیے اور چینی بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹو (بی آر آئی) اور عمان کے 2040 ویژن کے فریم ورک میں مل کر کام کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

سرکاری اعلامیے کے مطابق دونوں ممالک نے سرمایہ کاری اور سیاحت کے تبادلے میں اضافے کی حمایت کی۔

چینی سفارت کار نے یہ بھی کہا کہ قدیم “میری ٹائم سلک روڈ” سے شروع ہونے والے دو طرفہ تبادلہ پہلے ہی چینی اور عرب تہذیبوں کے مابین ثقافتی تبادلے کا نمونہ بن چکا ہے۔

وانگ نے عمان کی عملی خارجہ پالیسی کی بھی تعریف کی اور اس بات پر زور دیا کہ بیجنگ خطے کے معاملات میں مداخلت یا جیو پولیٹیکل رقابت میں حصہ لینے کی کوشش نہیں کرتا۔ ہمیں یقین ہے کہ عمان علاقائی امن اور ترقی میں خصوصی کردار ادا کرے گا۔

اس دوران البصیدی نے چین کے مؤقف اور علاقائی سلامتی اور بین الاقوامی نظم و ضبط کے تحفظ میں اس کے کے کردار کی تعریف کی۔

عمانی اخبار کی رپورٹ کے مطابق دونوں وزرائے خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ مشہور چینی مسلم ایڈمرل زینگ عمان کے شہر سلالہ میں تعمیر کیا جائے گا ہے. انہوں نے نشاندہی کی کہ یہ اقدام 600 سالہ عمانی سلطنت میں ان کے ان کے دورے کی علامتی اہمیت کا اظہار ہوگا۔





اپنا تبصرہ بھیجیں