South Korean PM arrives in Iran to help try to revive nuclear deal








جنوبی کوریا کے وزیر اعظم چنگ سی کیون ایران پہنچے ہیں تاکہ ایران اور عالمی طاقتوں کے مابین 2015 میں ہونے والے جوہری معاہدے کی بحالی کی کوشش کی جاسکے اور جنوبی کوریا میں منجمد ایرانی فنڈز 7 بلین ڈالر بحال کیے جائیں۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق چنگ 44 سالوں میں ایران کا دورہ کرنے والے پہلے جنوبی کوریا کے وزیر اعظم ہیں۔

جنوری میں ایران نے آبنائے ہرمز میں ایک جنوبی کوریا کے بحری جہاز اور اس کے ملاحوں پر پانی کی آلودگی کا الزام عائد کرنے کے بعد تناؤ میں حراست میں لے لیا تھا اور جنوبی کوریا سے اپنے منجمد 7 بلین ڈالرز کے اثاثوں کی بحالی کا مطالبہ کیا تھا۔

چنگ کا یہ سفر ایران کے ٹینکر اور اس کے کپتان کے رہا کرنے کے کچھ دن بعد سامنے طے پایا ہے جس میں جنوبی کوریا نے بھی ایرانی فنڈز کی بحالی کا عندیہ دیا ہے۔

واضح رہے کہ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان گذشتہ ہفتے بات چیت ہوئی تھی جس کا مقصد 2015 کے جوہری معاہدے کو بحال کرنا تھا جسے سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے تین سال قبل ترک کردیا تھا۔۔ تاہم ابھی تک کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوسکا ہے۔









اپنا تبصرہ بھیجیں