سعودی عرب میں ویکسین کی دوسری خوراک کا عمل روک دیا گیا




سعودی عرب نے کورونا ویکسی نیشن کے عمل کو تیز کرنے اور بڑے پیمانے تک لوگوں کو مہیا ‏کرنے کے لیے دوسری خوراک کی طے شدہ تاریخیں ملتوی کر دی ہیں۔

وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ مملکت میں دوسری خوراک کے لیے مقررہ کی گئی تمام تاریخیں ‏فی الحال ملتوی کی جارہی ہیں اور اس حوالے سے نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

مملکت میں وسیع پیمانے تک لوگوں کو کورونا ویکسین کی پہلی خوراک مہیا کرنے کی غرض سے ‏دوسری خوراک فراہم کرنے کا عمل عارضی طور پر روک دیا گیا ہے۔

‏ وزارت صحت نے اس فیصلے کے حوالے سے کہا کہ  ویکسین تیار کرنے والی کمپنیاں ویکسین کی ‏خوراکیں مقررہ تاریخوں پر مطلوبہ مقدار میں فراہم نہیں کر رہی ہیں۔ کمپنیوں پر دباؤ بڑھا ہوا ‏ہے۔

دوسری جانب سعودی عرب میں ادارہ امور حرمین شریفین نے مسجد الحرام میں آنے والوں کے جسمانی درجہ حرارت کو نوٹ کرنے کےلیے 70 تھرمل کیمرے نصب کیے ہیں جن کی نگرانی پر 500 افراد کو مامور کیا گیا ہے

مسجد الحرام میں ادارہ انسداد وبائی امراض کے ڈائریکٹر حسن بن برکات السویھری نے بتایا ہےکہ جدید ترین تھرمل کیمروں کی مدد سے وہاں آنے والوں کا جسمانی درجہ حرارت فوری طورپر نوٹ کیا جا سکے گا۔

ڈائریکٹر حسن بن برکات السویھری کا کہنا ہے کہ کیمرے جدید ترین ٹیکنالوجی سے آراستہ ہیں جو کلر کوڈنگ کے ذریعے آنے والوں کے جسمانی درجہ حرارت کی نشاندہی کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

ادارہ انسداد وبائی امراض کے مطابق جدید ترین کیمرے 6 میٹر کی دوری سے بھی جسمانی درجہ حرارت کو نوٹ کر سکتے ہیں جس سے اس امر کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ آنے والے شخص کو بخار تو نہیں اگر کسی زائر کا جسمانی درجہ حرارت بڑھا ہوا ہو تو کارکن احتیاطی تدابیر کے تحت اسے فوری طور پر دوسروں سے الگ کر دیتے ہیں اور ان کو ایمرجنسی میڈیکل سینٹرز بھیج دیا جاتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں