بچے کی تربیت کا نقشہ تیارکیجیے – محمداسعد الدین




ڈیئر پیرنٹس!!! آپ کے گھر کا ڈیزائن اور ڈیکوریشن توVIP ہے لیکن کیا آپ نے اپنے بچے کی تربیت کا کوئی ڈیزائن بنایا ہے؟؟لگی ناں عجیب سی بات………… جی بالکل،ویسے تو سننے میں یہ عجیب سی بات لگتی ہے لیکن اصل میں یہ سیریس ایشو ہے۔ آپ کو پتا ہے یہ سیریس ایشوکیا ہے، اطمینان سے کچھ باتیں پڑھ لیں اور سمجھ لیں۔
اللہ نے آپ کو بیٹے، بیٹی سے نوازا،بچے کی نظر یں خالی،زبان خاموش ہے،لیکن ”لرننگ کی بیٹری،فل چارج ہے اب وہ جو دیکھے گا،پہلی بار دیکھے گا،جو سنے گا،پہلی بار سنے گااور وہ جو بھی دیکھے اور سنے گا سیدھا اس کے Subconscious mindمیں جائے گا او ر بیج کی طرح ذہن کی زمین میں جڑ پکڑ لے گا۔ اس حساس اسٹیج پر پیرنٹس کے پاس بچے کی تربیت کا”ماسٹر ڈیزائن“ہونا آکسیجن کی طرح ضروری ہے کہ کون سی چیزیں،جملے، کون سے منظر کس انداز سے آنکھوں او رکانوں کے راستے بچے کے دل و دماغ میں داخل کرنا ضروری ہے،ساتھ ہی تربیت کے ماسٹر پلان کے دوسرے حصے میں ایسے فلٹرز انسٹال کرنا ضروری ہے جو بچے کو کسی بھی ان ہائی جینک مواد سے ہر حال میں محفوظ رکھ سکیں۔
آخری بات!!!پیرنٹس آپ کے گھر کی چھت پہلی نظر میں دور سے نظر آجاتی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ چھت سے پہلے بلکہ سب سے پہلے بلڈنگ کی بنیاد رکھی گئی ہے کیونکہ گھر خواہش نہیں ڈیزائن کے مطابق خاص ترتیب سے بنائے جاتے ہیں۔آپ سمجھ تو گئے ہوں گے کہ بچے کی تربیت کا”نقشہ“ خواہش نہیں نیچرل ترتیب کے مطابق بنے گا،بچے کی تربیت کی ترتیب کیا ہونی چاہیئے؟،یہ اگلے بلاگ میں پڑھیے تب تک اس بلاگ کو پڑھ کر اپنی رائے دیجیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں