دل و دنیا – ایمن طارق




وہ آکر پاس ہی کھڑا تھا ۔ فروٹ کٹنگ کرتے ہوۓ میں نے ُاس پر نظر ڈالی اور محسوس کیا کہ کچھ کہنا چاہتا ہے لیکن الفاظ یا جملے سوچ رہا ہے کہ مجھ تک بات کیسے پہنچاۓ ۔ بغیر کچھ کہے ایک اور کٹنگ بورڈ نکال کر اُس کے سامنے رکھ دیا اور سیب اور ناشپاتی بھی ۔

وہ بھی بغیر کچھ پوچھے دوسری چھری اُٹھا کر چھوٹی چھوٹی قاشیں کاٹنے لگا ۔ ماما وہ ہمارا جو فٹ بال کوچ ہے روز اُس نے Louis Vuitton کا بیگ لیاہوتا ہے اور شوز اُس کے GUCCI کے ہوتے ہیں ۔ اچھا اور کیا کیا آبزرو کیا آپ نے بیٹا ؟؟

بیٹا : بس یہی ۔ اور تو کچھ نہیں ۔ آپ کو پتا ہے ان برانڈز کی پرائس کیا ہوتی ہے ؟
ماما : ہاں پتا تو ہے لیکن اپ بتائیے شاید کچھ معلومات میں اضافہ ہو ۔

ماما شوز کی پرائس آن لائن میں نے چیک کئے تو شاید ۹۰۰£ کے تھے اور بیگ ۱۵۰۰£ کا ۔ واہ بھی زبردست ۔ لگ رہا ہے کوچ نے ساری پاکٹ منی سے شوز اور بیگ ہی لے لیے ۔ اور ہوسکتا ہے کہ اُس کے پیرینٹس نے بھی منع کیا ہو ۔ اچھا آپ بتائیں آپ نے پچھلے سال سے اس سال تک کتنے شوز چینج کیے ؟ شاید تین یا چار ماما ۔ میرا شوز سائز جلدی جلدی تبدیل ہورہا ہے ۔ اور بیگ ؟ بیگ تو میں نے لاسٹ ائیر نیا لیا تھا جو پھٹ گیا اور اس سال بھای جان کا پرانا والا لے لیا وہ بالکل نیو لگ رہا تھا ۔ اچھا اگر اتنی جلدی شوز سائز چینج ہورہا ہے تو کیا آپ بھی ۹۰۰£ کے شوز لینا پسند کریں گے یا أپ اسی قیمت میں کوئ ایسی چیز لینا چاہیں گے جو پائیدار ہو اور آپ کے دیر تک کام آۓ ؟جی میں سوچ رہا ہوں اگر اتنا اماونٹ ہو تو شاید میں اپنے لیے نیا آرچری سیٹ ، اپنے لیے لیپ ٹاپ لے لوں ۔ اچھا یہ بتائیں کہ یہ برانڈز کے جوتے اور شوز کیوں اہم ہوتے ہیں ؟

ماما لوگ یہی پسند کرتے ہیں ، فرینڈز انسپائر ہوتے ہیں ۔ یہ بہت cool لگتا ہے ۔ اچھا تو پھر مطلب یہ ہوا کہ لوگ کسی دوسرے کو اُس کے پاس موجود برانڈڈ چیزوں کی وجہ سے اپنا دوست بناتے ہیں یا نہیں بناتے ؟؟ اور وہ وہ جو خوبصورت ذہن ، ایمانداری ، رحم دلی ، علم یہ ساری خصوصیات ہوتی ہیڻ کسی انسان میں کیا اُن کو نہیں دیکھا جاتا ؟ماما یہ سب کون دیکھتا ہے یہ تو بہت بورنگ باتیں ہیں ۔ اچھا تو آپ اگر کسی سے دوستی کریں گے تو اُس کا بیگ اور شوز دیکھ کر کریں گے ۔ نہیں نہیں میں اپنی بات نہیں کر رہا یہ تو لوگوں کا بتا رہا ہوں ۔ فروٹس کٹ چکے تھے اور میرا پیارا بیٹا کچھ اُلجھا کچھ سلجھا سا کھڑا تھا ۔ معاشرے کے ٹرینڈز کا پریشر ، دوستوں کا پریشر ، میڈئا پر نظر آتی چمکتی دمکتی سلیبریٹیز کا پریشر ۔ یہ سب کچھ کتنا مشکل ہے ۔ آگے بڑھ کر میں نے اُس کے ماتھے کو چوما ۔

میری جان مجھے یہی محسوس ہوتا ہے کہ آپ کا یہ معیار نہیں لیکن أپ ان سب چیزوں سے کچھ دیر کو متاثر ہوجاتے ہو ۔ پریشان نہ ہو یہ سب کے ساتھ ہوتا ہے ۔ اہم بات یہ ہے کہ آپ یہ سب کچھ دیکھ کر بھی خود اس مقابلے میں شامل نہیں ہوتے ۔ مجھے پتا ہے کہ آپ یقین رکھتے ہیڻ کہ جب أپ کسی چیز کی خواہش کریں گے تو ہم پوری کوشش کریں گے کہ آپ کی خواہش پوری کریں لیکن اُس کے بعد بھی آپ کبھی ایسی کسی خواہش کا اظہار نہیں کرتے ۔ میں دیکھتی ہوں کہ أپ کی پاکٹ منی جمع ہوجاتی ہے لیکن آپ کبھی اس کو بغیر سوچے ضائع نہیں کرتے ۔ اور میں یہ بھی جانتی ہوں کہ کسی مال میں جاکر أپ برانڈڈ چیزوں کے مقابلے میں برابر رکھے عام سے برینڈ کے شوز اُٹھا کر کہتے ہو کہ بابا یہ لے لیتے ہیں ایک ہی بات ہے ۔

آپ کے سیلف کنٹرول کی یہ چھوٹی چھوٹی کوششیں ہم سے پوشیدہ نہیں ۔ لیکن کہیں کہیں اگر آپ کے دل میں کبھی اگر دنیا کی اچھی اچھی چیزوں کی خواہش ہوا کرے تو یہ بہت نیچرل ہے ۔ ہم کچھ تھوڑی دیر کے لیے ان سب چیزوں کی اٹریکشن سے انفلوئنس ہوجاتے ہیں ۔ اللہ سبحان و تعالی نے یہ دنیا بنائ ہی اتنی پیاری ہے اور اسمیں ہمارے لیے ہر چیز ٹیسٹ ہے ۔ اصل بات یہ ہے کہ ہم ٹیسٹ کے وقت اگر کچھ بھول بھی جائیں تو بعد میں دوسرے ٹیسٹ سے پہلے سنبھلنے کی اور مضبوط بننے کی کوشش کریں ۔ آپ کو یاد ہے وہ قرآن کی آیت کہ : کامیاب اصل میں وہ ہے جو آتش دوذخ سے بچ کر جنت میں داخل ہوگیا ۔ دنیا میں آپ اکثر ایسے لوگوں کو آگے دیکھو گے جن کے پاس برانڈز بھی ہیں ، ڈئزائنر بیگ ، شوز ، بڑے بڑے مکان ، مہنگی گاڑیاں سب کچھ ہے لیکن یہ تو صرف ایگزیم ہال میں ہورہا ہے ۔

رزلٹ کے وقت اللہ سبحان و تعالی کا وعدہ ہے کہ وہ ہمارے اعمال دیکھیں گے ، ہماری مضبوطی کو چیک کریں گے اور ہمارے دل کو دیکھیں گے ہم نے اُن کی خاطر اپنے دل کو دنیا کی اٹریکشن سے کتنا کلین کیا ۔ کچھ سکون سے فروٹ سلاد میں سے اپنا پورشن نکالتے ہوۓ مسکراتے ہوۓ وہ اندر کی طرف چلا گیا ۔ شاید کہ میرے بیٹے میرے ان ٹوٹے پھوٹے الفاظ سے تم دنیا کئ اس حقیقت کو سمجھ جاؤ ۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں