Home » اچھا وقت آئے گا – روبینہ اعجاز
بلاگز

اچھا وقت آئے گا – روبینہ اعجاز

دل خون کے آنسو روتا ہے نالائق حکومت لے آئے ،اب آگے دیکھو کیا ہوتا ہے، کل کی قومی اسمبلی کی کاروائی جو پوری دنیا میں وائرل ہوئی دنیا کے نقشے میں تو پاکستان کی پہلے ہی کوئی اوقات نہیں تھی اب اور زیادہ تماشا بنا ابھی میرا بیٹا میرے ساتھ اس ویڈیو کو دیکھ رہا تھا جس میں لڑائی جھگڑے دنگے فساد فائلوں کی بےقدری گالیاں اور مارکٹائی ہو رہی تھی اس نے اچانک سوال کیا امی جان یہ کیا ہو رہا ہے ؟

یہ کون لوگ ہیں ؟. یہ کیسی گندی گالیاں نکال رہے ہیں پولیس بھی اتنی ہے یہ انکو کیوں نہیں پکڑ کر سزا دے رہی میں اس کو کیا بتاوں کہ بیٹا یہ ہمارے حکمران ہیں جو غریبوں کی پکاریں اسمبلی میں ڈسکس کرتے ہیں اور ہماری قسمتوں کے فیصلوں ایوانوں میں بیٹھ کر بناتے ہیں یہ ہمارے لیے کیا کریں گے? جن کو خود اس بات کا احساس نہیں کہ جن سیٹوں پر وہ بیٹھتے ہیں جس ایوان کے اے سی وہ استعمال کر رہےوہاں کے ٹشوز جو استعمال کرتے جس کےکاغذات کا ایک ایک پیپر جو وہ یوز کرتے جن ڈیکسوں پر کھڑے ہو کر وہ گالی گلوچ کر رہے وہ انھیں غریبوں کے ٹیکسوں سے یہ سب خریدا گیا ہےیہ لوگ ان غریبوں کی عزت کا یہ کیا فیصلہ کریں گے جو خود کی عزت نہیں کر سکتے. پیارے نبی ص کی حدیث کا مفہوم ہے کہ جس نے کسی کے ماں باپ کو گالی دی اس نے اپنے آپ کو گالی دی تو پھر جو لوگ اسمبلیوں میں اپی ماں بہنوں کو گالیاں دیتے ہیں وہ کسی ماں بہن کی عزتوں کے رکھوالے کیسے ہو سکتے . میں تو یہ تک اپنے بیٹے کو نہیں بتا سکتی کہ بیٹا یہ کوئی اور نہیں ان کو ہم نے خود سارے پاکستان سے نکال کر اپنی تقدیروں کے فیصلے کرنے کے رہنما چنا ہے انھوں نے تو اپنی کتابوں میں قائداعظم علامہ اقبال اور مولانا مودودی جیسے رہنماوں کو پڑھا ہے وہ مجھ سے سوال کرتے ہیں تو کیا بتاوں کہ بیٹا وہی تو رہنما تھے تبھی تو پاکستان بن گیا

اگر آج کے حکمرانوں جیسے رہنما ہوتے تو ہم کبھی الگ ملک کا سوچ بھی نہیں سکتے تھے .یہ سب تو چاہتے ہوئے بھی میں اپنے بیٹے کو نا بتا سکی
مگر اب میں اپنے بیٹے کو یہ ضرور بتاوں گی بیٹا ان میں تربیت کی کمی ہے اسلام سے دوری ہے تبھی تو لڑجھگڑ رہے ہیں مگر اپ پڑھو لکھو اور اپنے اندر اتنی قابلیت اور احساس ذمہ داری پیدا کرو کہ اللہ کی زمین ہے اللہ کا نظام قائم کرو اللہ نے پاکستان کو 1947 میں دنیا کے نقشے میں اتارا تھا مگر نبی مہربان ص کو تو اس خطے سے خوشبو تو 1400 سال پہلے سے آرہی تھی وہ خوشبو اسلام کی خوشبو تھی وہ خوشبو اسرایلی یہودیوں کی تباہی کی خوشپو تھی جو ان شاء اللہ میرے بیٹے میری جان وہ آپ لاو گے آپ او گے ہمارے ایوانوں میں اور آپ جیسے ہی اسلام کا بول بالا کرو گے ان شاء اللہ اسلام سے پھرے ہوے نا اہل حکمرانوں کو ہٹا کر اہل حق لوگوں کے ہاتھ میں ہم جیسے غریبوں کے نصیبوں کی ڈور ہو گی ان شاء اللہ جن کو اللہ سے جواب دہی کا خوف ہو گا جن کی نظر میں ماں بہن کی عزت ہو گی وہ ان کو گالیاں نہیں بلکہ عزت دیں گے نظریں جھکا کر ان کے سوال سنیں گے اور اللہ کے دین کے مطابق ان کے فیصلہ کریں گے ان شاء اللہ وہ حکومت میں آکر اپنی جیبیں نہیں بھریں گے بلکہ زکوات کے نظام کو رائج کر کے بیت المال بھریں گے ان شاء اللہاور ہر غریب کے گھر کا چولھا جلے گا وہ تعلیم کے نظام کو بہتر کریں گے ہربچہ لڑکا لڑکی جتنا چاہیں پڑھ سکیں گے سارے ملک میں رنگ برنگی کتابوں کی بجاے ایک ہی طرح کا سلیبس ہو گا ان شاء اللہ

تعلیم مفت ہو گی امیروں سے زکوات لی جاے گی اور غریبوں میں تقسیم ہو گی بیواوں اور یتیموں کی کفالت بیت المال سے ہو گی اور رزق میں برکت ہو گی کوئی اولڈ ہاوس اور ڈے کیر سینٹر نہیں ہوں گے ان شاء اللہ عزتیں محفوظ ہوں ہر مرد اپنی نظریں جھکا کر چلے گا نمازوں کی پابندی ہو گی وقت کا خلیفہ یا حکمران خود امامت کرائے گا ہر نماز مسجدوں میں ادا ہو گی ہر نماز کے وقت مسجدیں بھری ہوئی ہوں گی اور کسی بھی گارڈ کی ضرورت نہیں ہو گی ہمارا ہر جوان مجاہد ہو گا اور ہر ماں مجاہدہ ہو گی ان شاء اللہ کتنا پر سکون ہو گا وہ وقت جب سب ادخلو فی اسلم کافہ پر عمل کریں گے ان شاء اللہ میرے بیٹے وہ وقت آپ لاو گے خوب پڑھو محنت کرو قران اور حدیث کا ساتھ کے ساتھ رہنا اور قرآن سے ہی ہر مشکل کا حل تلاش کرو قرآن کو اپنے دل کی ٹھنڈک اور بہار بنا لو اللہ پاک ہم سب کا حامی و ناصر ہو اور وہ اچھا وقت ضرور آے گا ان شاء اللہ،

Add Comment

Click here to post a comment