Home » “آغوش الخدمت جیسے ماں کی دوسری آغوش۔۔” زبیر منصوری
بلاگز

“آغوش الخدمت جیسے ماں کی دوسری آغوش۔۔” زبیر منصوری

میرا بچہ بھی باپ کے مہربان سائے سے محروم ہو گیا تھا ماں نے دوپٹّے سے آنسو پونچھتے ہوئے کہا حالات بہت تنگ تھے میں نے بیٹے کو ایسے ہی ایک آغوش میں داخل کروا دیا اور خود اسی طرح زندگی کی سختیاں جھیلنے لگی وہ کچھ دیر کے لئےماضی میں کھو گئی۔۔ مجھے یاد ہے راتوں کو تنہائی میں اکلوتا پیارا بیٹاجب شدت سے یاد آتا تو لحاف میں منہ چھپا کر سسکیوں سے رو لیتی تھی

ماں بتاتے ہوئے آبدیدہ ہو گئی تھی کبھی سوچتی بس اسے واپس گھرلے آتی ہوں میں اس کے بغیر نہیں رہ سکتی جو بھی ہو گا ماں بیٹا مل کر روکھا سوکھا کھا لیں گے وہ لمحہ بھر کو رکی اوربولی مگر پھر دل کہتا یہاں میں خود کسی اور کے در پر ہوں اسے کیوں در بدر کر دوں ؟بس یہ سوچ کر دل پر پتھر رکھ لیتی اوراچھے مستقبل کے خواب بنتی رہتی ۔۔۔ پھر اس کی آواز اچانک پرجوش ہو گئی مسرت کے ساتھ بولی میں اپنے ٹھیک فیصلے پر بہت خوش ہوں الحمدللّٰہ آج میرا بیٹا فوج میں افسر ہے میں بس آپ سب کو یہی بتانے پنجاب سے مٹیاری سندھ آئی ہوں اپنے بچوں کو خوشی خوشی اپنی آغوش سے الخدمت کی آغوش میں دے دیں یہ ماں ہی کی دوسری آغوش کی طرح ہے یہ بنا سنوار کر قابل بنا کر آپ کے بچے کو آپ کی آغوش میں لوٹا دے گا پنجاب سے آئی اس ماں کی آنکھوں میں خوشی کی چمک اور احسان مندی کے آنسو تھے وہ الخدمت کے نئے بننے والے آغوش مٹیاری میں ان ماوں کو اپنی کہانی سنا رہی تھی جو دل پر پتھر رکھ کر اپنے بچے آغوش کو سونپنے جا رہی ہیں وہ مائیں دو دن پہلے دیکھنے آئی تھیں کہ ہمارے جگر کے ٹکڑے کہاں رہیں گے ؟کیسے سوئیں گے ؟رات کو انہیں ڈر تو نہیں لگے گا ؟ان کی طبیعت خراب ہوئی تو کون انہیں جاگ کر دوا دے گا ؟انہیں کون پیار سے کھانا کھلائے گا ؟کون شفقت سے انہیں پڑھائے گا۔۔۔آخر دل کے ٹکڑے یوں خود سے دور کر کے بھیج دینا آسان تو نہیں ہوتا نا۔۔!

آ ج میں بھی وہاں سے گزرتے ہوئے ان کے کمرے دیکھ کر آیا ہوں میں نے مسکراتے ہوئے آغوش کے انچارج نوجوان طٰہ سے کہا یار یتیم تو میں بھی ہوں ایسی پر آسائش جگہ پر مجھے بھی جگہ نہیں مل سکتی؟ مگر کہاں صاحب ہم جتنے یتیموں کو اب الخدمت کہاں لفٹ کروائے گا شاباش الخدمت۔۔!
نشیمن پر نشیمن اس طرح تیار کرتا جا
کہ بجلی گرتے گرتے آپ ہی بیزار ہو جائے

درد میں سانجھی ساتھ نہیں

درد میں سانجھی ساتھ نہیں آنکھوں میں ویرانی تھی دل بھی میرا شانت نہیں اجلے دن میں نا کھیلی تھی گھور اندھیری رات میں بھی حصہ میں جس کے آتی تھی وہ شاہ میں گدا کہلاتی تھی آنسو پی کے جیتی تھی ذلت کا نشانہ بنتی تھی یا خاک میں زندہ رلتی تھی ہرس و ہوس کا سمبل تھی یا اینٹوں میں چن دی جاتی تھی چند ٹکوں میں بکتی تھی آہ میری بے مایہ تھی سوکھے لبوں پہ مچلتی تھی

威而鋼

以前服用威而鋼,但有效時間僅僅只有4小時,對於在常年在高原的我來說,時間有點太短,所以會考慮犀利士。

  • 犀利士(Cialis),學名他達拉非

犀利士購買

與其他五花八門的壯陽技巧相比,犀利士能在40分鐘內解決性功能勃起障礙問題,並藥效持續36小時。這效果只有犀利士能做到,因為醫療級手術複雜,不可逆,存在安全隱患;植入假體和壓力泵等,使用不便,且有病變的可能。