Home » 2022 کا 23 مارچ – رابعہ قریشی
بلاگز

2022 کا 23 مارچ – رابعہ قریشی

حرا 23 مارچ میں کیا ہوا تھا ؟ ندا تم ایک پڑھی لکھی لڑکی ہو ۔ تمھیں نہیں پتا 23 مارچ میں کیا ہوا تھا ؟کوئی بات نہیں میں بتا دیتی ہو ۔ 23 مارچ کو پاکستان بننے کی قرارداد منظور ہوئی تھی ۔ یہ قرارداد پاکستان 23 مارچ 1940 کو منٹو پارک لاہور میں پیش کی گئی اور یہ قرارداد پاکستان “تقسیم ہند” کے نام سے پیش کی گئی تھی ۔ ہندو پریس نے اس کو قرارداد پاکستان کا نام دیا۔

پاکستان میں 23 مارچ کے دن کو یوم الفرقان بھی کہتے ہیں ۔ اسی جدوجہد کے نتیجے میں آگے جا کر 14 اگست 1947 کو ہمیں کامیابی حاصل ہوئی اور ہمارا پیارا ملک پاکستان دنیا کے نقشے پر ابھرا اور تاریخ دوبارہ دہرائی گئی کہ مدینہ کے بعد جو ریاست کلمے کے نام پر بنی وہ پاکستان ہے ۔پاکستان کلمے کے نام پر بننے والی دوسری ریاست ہوگئی ۔ حرا تمھارا شکریہ کہ تم نے 23 مارچ کی تاریخی حقیقت مجھے بتائی ۔ ندا میں تمھارا شکریہ تب قبول کرو گی جب تم اس تاریخی حقیقت کو آگے منتقل کرو گی اور ہماری نسلوں کو اس حقیقت کے بارے میں علم دوں گی ۔ کیونکہ جب ہم اپنی نسلوں کو نہیں بتائی گے تو کون بتائی گا کیونکہ یہ نسلیں ہی ہمارے ملک کا سرمایہ ہیں جو ہمارے ملک کا مستقبل ہیں ۔ ہم ان کے دل میں وطن کی محبت بٹھائیں گے تو آگے ہمارے ہی ملک کے لیے بہتر مستقبل بن کر ابھریں گے ۔ جی حرا میں اپنے وطن کی محبت آگے لوگوں میں ضرور منتقل کروں گی اور ایک سچا پاکستانی ہونے کا حق ادا کروں گی ۔ کیونکہ وطن سے محبت تو ایمان کا حصہ ہے اور ہمارے نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے بھی اپنے وطن سے محبت کی تھی۔

تئیس مارچ کے دن اس بار ہم یہ ارادہ کریں کہ ہمارا جو بھی قدم اٹھے تعمیر پاکستان کے لیے اٹھے اور ہمارے آباؤ اجداد نے پاکستان یقینا محبت ، محنت ، عزائم بلند رکھ کر لاکھوں جانے قربان کر کے بنایا ہے ۔ ہمیں اپنی آزادی پر فخر ہونا چاہیے اور ہم نے کبھی اپنی آزادی کو فراموش نہیں کیا اور نہ ہی کریں گے ۔ آج قرارداد پاکستان کو منظور ہوئی 83 سال ہوگئے اور ڈاکٹر عبد القدیر خان کی بدولت پاکستان ایک ایٹمی طاقت والا ملک بن گیا اور پاکستان کے دشمن آج اگر اس وطن کو تر نوالہ بنانے سے گبھرا رہیں ہیں تو وہ اس کا ایٹمی طاقت ہونا ہے اور اگر عالم اسلام میں کوئی مشکل پیش آتی ہے تو باطل ہمیشہ جو لحاظ کر لیتا ہے عالم اسلام کاتو وہ پاکستان کا ایٹمی طاقت ہونا ہی ہے ۔ اللہ ہمارے ملک کی حفاظت کرے اور ہماری نسلوں کے دلوں میں بھی وطن کی محبت قائم ودائم رکھے۔ (آمین)

1 Comment

Click here to post a comment