بلاگز

حریمِ ادب کا سٹال – رخسانہ اقبال راؤ

آج ایکسپو سینٹر میں حریم ادب کے اسٹال پر پہلے دن ہمیں جانا تھا۔اصلاحی ادب کے فروغ کے لیے پوری ٹیم سرتوڑ کوششوں میں مصروف تھی۔ کتب میلہ کے لیے 12، 13، 14 ،15 کی تاریخ مقرر تھی لیکن ٹیم ممبرز نے 11 تاریخ سے ہی ایکسپو سینٹر میں اپنے سٹال کی ڈیکوریشن کا کام شروع کردیا ۔یہ ٹیم ممبرز بھی سب گھر یلو بال بچوں والی خواتین اور کچھ طالبات تھیں ۔۔لیکن ایک بڑے مقصد کی خاطر بہت پرجوش اور پرعزم نظر آرہی تھیں ۔

صبح جیسے ہی ہم ہال نمبر1 کے گیٹ سے انٹر ہوئے تو ایک فل سائزInternational book fairکا بینر بڑی سی دیوار پر آویزاں نظر آیا۔جس سے جذبوں کی صداقت اور اور یقین کو پختگی ملی۔صبح کے نو بج چکے تھے اور ہم اپنے تمام سازوسامان سمیت سٹال کو سیٹ کرنے میں مصروف ہوگئے۔اردگرد ہر کوئی اسی تگ و دو میں مصروف تھا کہ زیادہ سے زیادہ visitors کو اپنی کتب اور دیگر علمی کاوشوں کی طرف متوجہ کیا جا سکے ۔ہمارے اسٹال پر حریم ادب ڈائریkey rings مجلے ،ناول اور اس کے علاوہ بے شمار کتابچے موجود تھے۔میڈیا کے اس پرفتن دجالی دور میں بھی کتب بینی کے شائقین کی اتنی بڑی تعداد کو دیکھ کر خون میں سیر وں اضافہ ہو رہا پیمرہ کی ٹیم ہمارے اسٹال پر آئی تو ہمارے مستعد عملے نے بہت اچھے انداز میں انہیں حریم ادب کا تعارف دیا اور کچھ تحائف پیش کیےفوٹو گرافرز نے بھی ہماری مصنوعات اور اشیا میں دلچسپی لیتے ہوئے تحفہ لینے کا مطالبہ کیا جسے ہم نے خوش دلی سے پورا کیا۔

شام تک ایک بہت بڑی تعداد نے استفادہ کیا۔قارئین میں سے جو اب تک دیکھنے نہیں آئے وہ آئندہ تین دن میں ضرور چکر لگائیں واضح رہے کہ اپنی ذاتی مصروفیات چھوڑ کر یہ سب کام کرنے والے رضاکار ہیں جنہیں کوئی معاوضہ دنیا میں نہیں لینا مگرہاں بدلے میں صرف جنت چاہتے ہیں۔۔۔۔!

Add Comment

Click here to post a comment