آپ صرف ڈرامہ دیکھیں ! – عبدالسمیع قائم خانی




بھائی جان آپ صرف ٹرینڈ بنا سکتے ہیں اور ڈرامے دیکھ کر ڈھائی منٹ کا ابال محسوس کرسکتے ہیں۔ جبکہ وہ پوری طرح اپنی توجہ اپنے نظریات کی ترویج اور انہیں طاقت کے مراکز میں داخل کروانے میں مرکوز کئے کام کرتے رہے ہیں، کررہے ہیں اور کرتے رہیں گے۔ انہوں نے رنجیت سنگھ کا مجسمہ لاہور میں لگوایا کل کو وہ راجہ داہر کا مجسمہ کراچی اور دیبل میں بھی لگوائیں گے۔
آپ مرزا کی گرفتاری، طارق جمیل کی معافی، مفتی مسعود کی چھترول، ضمیر اختر نقوی کی میمز، سراج الحق کی ٹیڑھی ٹوپی اور مولانا فضل الرحمن کی بینڈ بجتے دیکھ کر خوش ہوتے رہیں۔ اللہ نے اپنا کام جن سے لینا ہے وہ لے کر رہے گا انشاءاللہ …… آپ بس ڈرامے دیکھیں اور ڈرامے کرتے رہیں۔ اور اگر ارطغرل سمجھ آجائے تو اس کے اقوال پر عمل بھی شروع کردیں۔۔۔ لیکن آپ کیسے عمل کرسکتے ہیں، ارطغرل دیکھنے والوں کی بڑی تعداد ان لوگوں کی ہے جو پہلے مشرف کے حامی تھے، امریکہ کو اڈے دینے کے حق میں دلائل دیتے ہیں، آئی ایم ایف کے قرضوں کو برکت اور ورلڈ بینک کی انویسٹمنٹ کو رحمت سمجھتے ہیں … حالانکہ ارطغرل کہتا ہے “اگر تم نے اپنے دشمن کو کو اپنا وطن ہی نہیں بلکہ ایک پتھر کا ٹکڑا بھی رکھنے دیا تو مصائب ہم پر آپڑیں گے”
اور وہ کہتا ہے “سب سے بچکانہ چیز تجارت کی رسی سے کافروں کے کنویں میں جانا ہے”۔ خیر بات ہورہی تھی راجہ داہر اور محمد بن قاسم والوں کی، تو بھائی راجہ داہر والوں کو اپنی منزل اور اس منزل کی طرف جانے والے سارے راستے پلان اے بی سی کے ساتھ معلوم ہیں۔۔۔ محمد بن قاسم والوں کے پاس کچھ ہے تو لے آئیں مارکیٹ میں۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں