جامِ بے طلب از شفا ہما (ناول) – بابِ اوّل – قسط نمبر 10

قسط نمبر ۱۰پورچ میں آکر اس نے دروازہ کھولنے کے لیے ہاتھ بڑھایالیکن اسی لمحے ایک خیال تیزی سے ذہن میں آیا تھا۔ ”اوہ۔۔“وہ پرس کھنگالنے لگی لیکن وہاں کُچھ ہوتا تو ملتا نا!اس نے بہت الجھ کرپرس وہیں فرش ..مزید پڑھیں

جامِ بے طلب از شفا ہما (ناول) – بابِ اوّل – قسط نمبر08

قسط نمبر ۰۸ارے کہاں جا رہی ہو؟ ……..نائلہ نے اجیہ کا بازو اپنی جانب کھینچتے ہوئے کہا۔ ”کینٹین جا رہی ہوں تمہیں کیا پریشانی ہے؟“اجیہ نے بازو چھڑاتے ہوئے رخ موڑ کر اسے دیکھا۔ اسکی آنکھوں میں حیرانی دیکھ کر ..مزید پڑھیں

جامِ بے طلب از شفا ہما (ناول) – بابِ اوّل – قسط نمبر 05

قسط نمبر ۰۵نائلہ نے ڈرتے ڈرتے دروازے پر ہلکی سی دستک دی چند لمحے انتظار کیا پھر دوبارہ دستک دے کر اس نے ہینڈل پکڑ کر گھُمانے کی کوشش کی، دروازہ لاکڈ تھا۔ ”ابو۔۔میں ہوں نائلہ “چند لمحے سوچنے کے ..مزید پڑھیں

جامِ بے طلب از شفا ہما (ناول) – بابِ اوّل – قسط نمبر 04

قسط نمبر ۰۴اجیہ ٹیرس پر کھڑی آسمان کو گھور رہی تھی۔نیلے آسمان پر شفق کی سُرخی پھیلی ہوئی تھی۔سُورج طُلوع ہونے کا منظر بہت خوبصورت تھا۔اجیہ سحر زدہ سی اسی جانب متوجہ تھی کہ ماما کی آواز کانوں سے ٹکرائی۔وہ ..مزید پڑھیں