امریکا میں سیاہ فام شہری کی ہلاکت کے بعد احتجاج جاری




نیویارک: (8 جون 2020) امریکا میں سیاہ فام شہری کی ہلاکت کے بعد احتجاج کی شدت میں کوئی کمی نہیں آئی۔ سابق چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کولن پاول کی ٹرمپ پر کڑی تنقید ، صدارتی انتخابات میں جو بائیڈن کی حمایت کا اعلان کردیا۔

پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کی ہلاکت کے بعد احتجاج کی لہر برقرار ہے ۔ کئی شہروں میں پرتشدد احتجاج کی وجہ سے کرفیو لگا دیا گیاتھا لیکن اتوار کو بیشتر مظاہرے پرامن رہے جس کے نتیجے میں حکام نے کرفیو کے خاتمے کا اعلان کیا۔ مینا پولس کی کونسل نے محکمہ پولیس کو ختم کرتے ہوئے اس کی تعمیر نو کے حق میں ووٹ دے دیا۔ کئی ریاستوں میں مظاہرین کے مطالبات پر پبلک سیکیورٹی اور پولیس میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کا وعدہ کرلیا گیا۔

امریکی فوج کے سابق چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کولن پاول نے بھی ٹرمپ پر کڑی تنقید کی ہے۔ ان کے مطابق امریکی صدر نے دنیا بھر میں اپنی پوزیشن کو کمزور کردیا ہے۔ اب وہ اگلے انتخابات میں ڈیموکریٹک امیدوار جو بائیڈن کی حمایت کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں