وائلڈ لائف پارک کے طوطے سیاحوں کو فحش گالیاں دینے لگے –




لندن: انگلینڈ کے ایک وائلڈ لائف پارک میں 5 طوطے سیاحوں کو نہایت فحش گالیاں دینے لگے جس کی وجہ سے انہیں عارضی طور پر وہاں سے ہٹا دیا گیا۔

انگلینڈ کے لنکن شائر کے وائلڈ لائف پارک میں لائے گئے 5 نئے طوطوں کو عارضی طور پر عوامی مقام سے ہٹا دیا گیا ہے، جس کی وجہ ان طوطوں کا سیاحوں کو فحش گالیاں دینا ہے۔

مذکورہ 5 افریقی سرمئی طوطے 15 اگست کو لنکن شائر وائلڈ لائف پارک میں لائے گئے تھے۔

پارک کی انتظامیہ کے مطابق طوطوں نے قرنطینہ کے دوران ایک دوسرے سے فحش گالیاں سیکھ لیں۔ ان کی گالیوں پر پارک کا اسٹاف قہقہے لگاتا رہا جس سے ان طوطوں کی مزید حوصلہ افزائی ہوئی۔

انتظامیہ کے مطابق اس سے قبل بھی ان کے پارک میں ایسے طوطے لائے گئے تھے جو بعض اوقات غلط زبان استعمال کرتے تھے، اب مذکورہ پانچوں طوطے ایک ہی مقام سے حاصل کیے گئے ہیں تو اندازہ ہے کہ وہاں پر ان گالیوں کا استعمال نہایت عام تھا لہٰذا یہ طوطے بھی وہی سیکھ گئے۔

انتظامیہ کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے پارک بند تھا ور جیسے ہی پارک کھلا انہیں ڈسپلے پر رکھا گیا، لیکن جلد ہی انہوں نے پارک میں آنے والے سیاحوں کو فحش گالیاں دینی شروع کردیں۔

ان کے مطابق طوطوں کی جانب سے دی جانے والی گالیوں میں ہر قسم کی گالیاں شامل ہیں۔

انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ویسے تو سیاح ان گالیوں کو سن کر ہنس رہے ہیں لیکن پارک میں بچے بھی آرہے ہیں لہٰذا ان طوطوں کو عوامی مقام سے ہٹا دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

انتظامیہ کے مطابق اگر ان طوطوں کی گالیوں کا سلسلہ جاری رہا تو انہیں علیحدہ علیحدہ جگہ پر رکھا جائے گا۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں