آرمینیا کا آذربائیجان کی شہری آبادی کو نشانہ بنانا انسانی قوانین کی خلاف ورزی ہے، ترکی




انقرہ : ترک حکام نے آرمینیا کی جانب سے آذری شہر گنجہ پر حملے کو آرمینیا کی بیچارگی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ آرمینیاں نے لاقانونیت کا نیا اظہار کیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار ترک وزارت خارجہ نے آذربائیجان کے شہر گنجہ پر آرمینیائی فوجی حملے کی مذمت کرتے ہوئے کیا، ترک وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ شہر گنجہ پر آرمینیائی فوج کے حملے انسانی جرم کا ارتکاب ہے۔

ترک وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ آرمینیا متنازعہ علاقے ہٹ کر آذربائیجان کی شہری آبادی کو نشانہ بنارہا ہے جو جنیوا سمجھوتے کی خلاف ورزی ہے۔

ترک حکام نے آذربایئجان کے تعاون پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہم آذربائیجان کے موقف کی حمایت کرتے ہیں اور شہری آبادی کو نقصان سے بچانے کےلیے تمام ممکنہ کوششیں کی جارہی ہیں۔

خیال رہے کہ کچھ دیر قبل آذربائیجان کے صدر نے آرمینیا سے جھڑپوں کے دوران متنازعہ نگورنوکاراباخ ریجن کے شہر جبرائیل کا کنٹرول حاصل کرنے کا اعلان کردیا۔

صدر آذربائیجان کا اعلان کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آذری افواج نے جبرائیل شہر پر مکمل کنٹرول حاصل کرلیا ہے، مزید علاقے قبضے میں لینے کے بعد آذربائیجان کے صدر نے ملٹری کمانڈر کو مبارک باد دی۔

واضح رہے کہ دونوں ممالک کے درمیان 8 روز سے جاری جھڑپوں میں اب تک 230 اموات ہو چکی ہیں۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں