امت کا خبر گیر چلا گیا ۔ بنت شیروانی




کوئی بھی عالمی مسئلہ ہوتا تو ۔۔۔۔۔۔۔۔ عبد الغفار عزیز صاحب کا ویڈیو کلپ آجاتا ۔ اس کے حوالے سے اور وہ پوری صورت حال اور حالات و واقعات سے آگاہ کرتے۔ اور ان کی کہی ہوئی باتیں پوری تصدیق شدہ ہوتیں۔ عالمی مسئلوں کی خبروں پر ان کی تصدیق کا آنا یا تردید کا آنا ۔۔۔۔۔۔

ہم پر حق کو کہ کیا سچائی کیا ہے ؟؟؟ اس معاملہ کی ۔۔۔۔ اس کی وضاحت کرتا۔ برما کے حوالے سے ان کا پوری بریفنگ دینا اور پھر ہمارے لۓ کرنے والے کام بتانا ۔اور پھر اس کے ذریعہ ہمیں خود بھی اندازہ ہوتا کہ یہ وطن بھی ہمارے لۓ کتنی بڑی نعمت ہے۔کہ جس کا ہمیں ادراک نہیں ہے۔ کہ شام و برما کے حوالے سے وہ ساری باتیں بتاتے تو ہمیں اپنے وطن عزیز کی قدردانی آتی۔

ان کی بیماری کا بھی سُن کر دُعا تھی کہ وہ جلد ہی صحت یاب ہوجائیں ۔لیکن ان کا وقت اتنا ہی تھا اس زندگی میں لہذا۔۔۔۔۔۔۔۔
آج عبدالغفار عزیز صاحب تو اپنے خالق حقیقی سے جاملے ۔ اور اس وقت یا ربی ہم گواہی دیتے ہیں کہ انھوں نے اپنی زندگی تیرے راستے میں لگادی تھی۔تو تُو ان سے راضی ہوجانا اور ان کی بہترین میزبانی کرنا۔

اور ہم ان کی بہت سی اچھی خصوصیات کو جاننے کے ساتھ ان کی اس بات پر عمل کرنے کی کوشش کریں کہ کسی بھی خبر کی پہلے تصدیق کریں ۔ پھر اسے آگے پھیلائیں , تو یہ یقینا ان کے لۓ بھی صدقہ جاریہ ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں