جنسی زیادتی کا شکار 6 سالہ بچی دوران علاج دم توڑ گئی




نئی دہلی : بھارت میں خالہ زاد بھائی نے چھ سالہ معصوم بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست اترپردیش کے شہر ہاتھرس میں ایک اور بیٹی کی عصمت دری کا خوفناک واقعہ سامنے آیا ہے۔

ہاتھرس کے علاقے بلگڑھی میں بن ماں کی چھ سالہ بچی کو اسی کے خالہ زاد نے جنسی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا، بچی کی ماں سات ماہ قبل فوت ہوگئی تھی جس کے بعد خالہ متاثرہ بچی کو اپنے ساتھ گھر لےگئی۔

متاثرہ بچی کے باپ نے الزام لگایا کہ 10 دن قبل سالی کے بیٹے نے میری بچی کا ریپ کیا اور پھر اسے علاج کے بجائے بیت الخلاء میں بند کردیا۔

باپ نے کہا کہ جب بچی کی حالت بگڑنے لگی تو اسے مقامی اسپتال میں منتقل کیا گیا تاہم حالت کو مزید بگڑتا دیکھ کر ڈاکٹروں نے اسے فوری طور پر دہلی منتقل کروایا جہاں وہ دوران علاج زندگی کی بازی ہار گئی۔

متاثرہ بچی کے اہل خانہ نے انصاف کےلیے لاش سڑک پر احتجاج شروع کردیا اور ملزم کی گرفتاری تک بچی کی آخری رسومات ادا کرنے سے انکار کردیا۔

خیال رہے کہ کچھ روز قبل ہاتھرس شہر میں ہی 19 سالہ طالبہ سے چار بااثر اوباش نوجوانوں نے جنسی زیادتی کی تھی، ملزمان نے زیادتی کے بعد لڑکی کی زبان کاٹ دی تھی جبکہ جسم کی متعدد ہڈیاں بھی توڑ دی تھیں۔ ریپ اور تشدد کے باعث لڑکی دوران علاج دم توڑ گئی تھی۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں