پیارے سودیم ۔ افشاں مراد




پیارے سودیم !!!
تمہاری ماں تمہارے لئے بڑی پریشان اور بے بس ہے، اس نے مجبوری میں تمہارے علاج کے لئے دل پر بھاری پتھر رکھ کر پاکستان کی حکومت سے ( کہ شہریوں کی جان ومال کی حفاظت کے ساتھ ان کے علاج معالجے کی ذمہ داری بھی اسی کی ہے ) اور پاکستان بھر کے بڑے بڑے مخیر اداروں اور سیٹھوں سے درد مندانہ اپیل کی ہے کہ میرا بیٹا خون کے سرطان میں مبتلا ہے .

اس ۵/۶ سالہ جگر پارے کو دعا کی تو ہر لمحہ ضرورت ہے لیکن اسے آغا خان میں علاج کےلئے دعا کے ساتھ ساتھ اصل میں دوا کی ضرورت ہے جس کے لئے آغا خان نے ۵۰/۶۰ لاکھ روپے کا تخمینہ بتایا ہے جو اس کے پاس نہیں ہے۔ ہم سودیم کو نہیں جانتے تھے، ہمیں اس کے بارے میں روزنامہ جنگ میں دردمند دل رکھنے والی ہماری مہربان نرجس ملک نے بتایا اور اس کی ماں کی یہ ویڈیو بھیجی کہ سودیم آغا خان میں اسی وارڈ میں داخل ہے جہاں ان کی بھتیجی بھی زیر علاج ہے، ان سے اس بچے کی ہر لمحہ بگڑتی حالت کو اور اس کی ماں کا اس کی زندگی کے لئے بلک بلک کر رونا دیکھا نہیں جاتا،اس لئے اس کےلئے کچھ کرنا چاہیئے۔

انہوں نے اس کی ما ں سے ہماری بات بھی کرائی جس نے بتایا کہ اس کا بیٹا خون کے سرطان میں مبتلا ہے۔ اس کا بلکل مفت علاج انڈس اسپتال میں ہو گیا تھا اور سودیم گھر آگیا تھا ہم بہت خوش تھے لیکن ہماری یہ خوشی زیادہ دیر قائم نہ رہ سکی اور کچھ دنوں بعد اس کا مرض پھر واپس لوٹ آیا۔جس کا علاج اب انڈس میں نہیں بلکہ صرف آغا خان اور کسی ایک اور اسپتال ہی میں ہو سکتا ہے۔ ہم نے اسے آغا خان میں داخل کرا دیا ہے لیکن اس کے علاج کےلئے اس کے پاس مالی وسائل نہیں ہیں۔

آغا خان والے ( اپنے چارٹر کے مطابق charitable Hospital ہونے کے باوجود )ہمیں اس کے علاج کے لئے ۵۰/۶۰ لاکھ روپے جمع کرانے کےلئے بار بار تقاضے کررہے ہیں ہم نے پاکستان بھر کے نیوزچینلز میں اپنے جاننے والے مشہور اینکرز اور نیوز ڈائریکٹرز کو ذاتی خط کے ساتھ یہ ویڈیو بھیجی کہ وہ اس بچے کی ماں کی دکھ بھری اپیل اپنے اپنے پروگرام کے آخر میں یا الگ سے نیوز پیکیج کی صورت میں براڈ کاسٹ کر دیں تو اس بچے کی زندگی بچائی جا سکتی ہے۔ ہمیں اب تک ARY اور NEU ٹی وی چینل کے سوا کسی بھی طرف سے کوئی اطلاع نہیں ملی۔

ہم ایک بار پھر ان سے اور دوسرے تمام ٹی وی اینکرز اور نیوز ڈائریکٹرز سے درخواست کرتے ہیں کہ اس بچے کی جان بچانے کے لئے مالی امداد کے لئے جو کچھ بھی کر سکتے ہوں،کریں اور اللہ تعالی سے اجر عظیم کا یقین کریں۔ہم اس کی ماں سمیرا کا فون نمبراور اس کے والد راؤ دانش کا بنک اکاؤنٹ بھی دے رہے ہیں تاکہ ان سے بات بھی کی جاسکے اور براہ راست مالی مدد بھی۔ اس کی ماں سمیرا کا نمبر 03130255526 ہے

ہم نے پاکستان بھر کے ٹی وی چینلوں میں اپنے جاننے والے اینکرز اور نیوز ڈارئکٹرز کو ذاتی طور اپیل کی صورت میں جو خط لکھا تھا اس کا متن یہ ہے۔

میرے محترم بھائی،
السلام علیکم۔ اللہ آپ کو ہمیشہ خوش رکھے اور مزید کامیابیوں سے نوازے۔ آپ کو میں نے ایک پانچ سالہ معصوم بچے کی ماں کی درد بھری اپیل بھیجی ہے۔اللہ ہمیں اس قسم کی صورت حال سے بچائے۔آمین

میں آپ سے درخواست کرتا ہوں کہ آپ اس بچے کی جان بچانے میں تعاون کریں اور اس بچے کے خون کے سرطان میں مبتلا ہونے اور اس کے لئے ۵۰/۶۰ لاکھ روپے کے اخراجات کے لئے اس کی ماں کی دکھ بھری اپیل کا اپنے پروگرام میں اپیل کی صورت میں یا نیوز پیکیج بنا کر نشر کریں تو ہو سکتا ہے آپ کے اس نیک عمل سے اس بچے کے لئے طبی اخراجات میسر ہو سکیں اور اس کی جان بچ جائے۔ مجھے یقین ہے کہ آپ کے اس نیک عمل سے جہاں اس کے والدین خوشی محسوس کریں گے وہیں آپ کو بھی سکون قلبی اور اللہ تعالی کی خوشنودی حاصل ہو گی اور کوئی بعید نہیں کہ آپ کا یہی عمل آپ کی بخشش کا ذریعہ بن جائے۔ امید ہے آپ مجھے مایوس نہیں کریں گے۔

خاکسار
عارف الحق عارف , سیکرامنٹو۔

مشہور اینکر اور ہماری صحافی بہن اسرا غوری بہن نے فیس بک پر اطلاع دی ہے کہ سودیم ICU میں ہے اس کی حالت اچھی نہیں ہے اس کے ماں باپ کی حالت دیکھی نہیں جا تی۔اللہ تعالی کوئی معجزہ کردے اور اس ننھے فرشتے کی جان بچا لے۔ آمین

سودیم ۔۔۔۔۔۔۔۔ اگر تمہاری زندگی ہے تو ہمیں اپنے اور تمہارے خالق حقیقی شافع کریم پر پورا یقین ہے کہ وہ اپنی عطائے کریمی سے پردہ غیب سے تمہارے علاج کے اخراجات کا ضرور بندوبست کر دے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں