بھارت کو گندا ملک کہنے والا دنیا کا پہلا صدر، سنسنی خیز بیان –




واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا بھارت سے متعلق وہ بیان آ گیا ہے جس نے سب کو چونکا دیا ہے، اس بیان سے یہ حقیقت سامنے آ رہی ہے کہ بے ہودگی ہندوستان کی پہچان بن چکی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق امریکی صدارتی انتخابات کی بحث نے بھی مودی سرکار کو آئینہ دکھا دیا ہے، ٹرمپ نے انڈیا کو غلیظ، گندا اور بے ہودہ قرار دے دیا۔

اس بیان کے بعد پاکستان کو تنہا کرنے کے خواب دیکھنے والے خود رسوا ہو گئے ہیں، اور یہ پاکستان کی جانب سے بھارت کا اصلی چہرہ دکھانے کے اثرات بھی کہے جا سکتے ہیں۔

انھی اثرات کا نتیجہ ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ بھی مان گئے کہ بھارت غلیظ اور بے ہودہ ملک ہے۔

3 نومبر کو صدارتی انتخابات سے قبل آج ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے ڈیموکریٹک حریف جو بائیڈن کے درمیان آخری صدارتی مباحثہ ہوا، جو گزشتہ مباحثے کے مقابلے میں خاصا منظم رہا۔

اس مباحثے کے دوران مختلف موضوعات پر بحث کی گئی جیسا کہ کرونا کی عالمگیر وبا، نسل پرستی، پولیس تشدد اور ماحولیات وغیرہ۔ اس پورے مباحثے میں بھارت کا نام بہ طور مثال ایک مرتبہ آیا اور وہ بھی نہایت منفی انداز میں۔

ماحولیاتی تبدیلی کا ذکر ہو رہا تھا جب امریکی صدر ٹرمپ نے کہا ’انڈیا ایک گندا ملک ہے، اس کی ہوا غلیظ ہے۔‘

یونی ورسٹی آف فلوریڈا کے مطابق انتخابات میں اب تک 35 ملین امریکی پہلے ہی اپنے ووٹ کاسٹ کر چکے ہیں، جو کہ 2016 کے انتخابات میں ڈالے گئے ووٹ کا ایک چوتھائی سے کچھ زیادہ بنتا ہے۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں