The 16th anniversary of the bloodthirsty fish




ہیلسنکی: خونخوار مچھلی کی  فن لینڈ کے مچھلی گھر (ایکویریم) میں 16 ویں سالگرہ منائی گئی۔

 بین الاقوامی میڈیا کے مطابق فن لینڈ کے مچھلی گھر میں ڈپریشن اور احساسِ تنہائی دُور کرنے کے لیے خونخوار مچھلی کے لیے جشن کا اہتمام کیا گیا  جبکہ میکو کا تعلق ’گروپر ‘ قسم کی مچھلیوں سے ہے جنہیں بہت خطرناک اور خونخوار سمجھا جاتا ہے کیونکہ یہ صرف اپنے سے چھوٹی مچھلیوں ہی کو نہیں کھاتیں بلکہ اپنے سے بڑی جسامت والی مچھلیوں تک پر حملہ کرکے ان کی کھال اُدھیڑ دیتی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پینتیس پونڈ وزنی میکو بھی خونخوار مچھلی ہے جو کچھ روز پہلے ہی پورے سولہ سال کی ہوئی ہے اور  اسے فن لینڈ کے ’سمندری لائف ہیلسنکی‘ نامی تفریحی مقام کے ایک مچھلی گھر میں اکیلا رکھا گیا ہے (کیونکہ یہ صرف اپنے سے چھوٹی مچھلیوں ہی کو نہیں کھاتیں بلکہ اپنے سے بڑی جسامت والی مچھلیوں تک پر حملہ کرکے ان کی کھال اُدھیڑ دیتی ہیں)۔

واضح رہے کورونا وائرس کی وجہ سے عوام کےلیے تفریحی مقام بند کردیا گیا ہے اور میکو پہلے ہی اپنے ٹینک میں تنہا تھی لیکن جب لوگ یہاں گھومنے پھرنے آتے اور اس کے شفاف گھر کے سامنے کھڑے ہو کر اسے دیکھتے  تو خونخوار میکو کی تنہائی دور ہوجاتی تھی۔

خیال رہے ماہرین کا کہنا تھا کہ  انسان کے ساتھ جانوروں اور مچھلیاں بھی تنہائی میں بیمار ہوجاتی ہیں جو ان کی زندگی کے لیے خطرہ بن سکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں