فلسطینی علاقوں پر قبضے کی کوششیں تیز کرنے کا مطالبہ – Urdu News – Today News




مغربی کنارہ: صہیونی فوج اور فلسطینیوں کے درمیان جھڑپیں ہو رہی ہیں‘ اسرائیلی انتظامیہ نے مسلمانوں کو بیت المقدس میں داخلے سے روک رکھا ہے

مقبوضہ بیت المقدس (انٹرنیشنل ڈیسک) اسرائیل کی جانب سے فلسطینی علاقوں پر قبضے کے منصوبے کے سلسلے میں عملی کوششیں تیز کردی گئی ہیں۔ خبر رساں ادروں کے مطابق امریکی صدارتی انتخابات اور اس کے ممکنہ نتائج کے پیش نظر صہیونی عہدے داروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار جوبائیڈن کی کامیابی کے بعد فلسطینی علاقوں کے اسرائیل سے الحاق کاعمل متاثر ہوسکتا ہے۔ مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی عہدیداروں نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صہیونی حکومت کو مشورہ دیا ہے کہ جوبائیڈن کے امریکی منصب صدارت پرفائز ہونے سے قبل ہی مقبوضہ مغربی کنارے کو اسرائیل میں شامل کرنے کے اقدامات تیز کردینے چاہییں۔ عبرانی فوجی ریڈیو کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ غرب اُردن کے شمالی علاقوں کی یہودی کونسل کے سربراہ یوسی داگان نے کہا ہے کہ حکومت کو غرب اردن کے اسرائیل سے الحاق کے پروگرام پر فوری طور پرعمل شروع کرنا چاہیے کیوں کہ آنے والا وقت زیادہ سے زیادہ مشکل ہوتا جا رہا ہے۔ امریکا میں جوبائیڈن کی انتخابات میں کامیابی کے بعد مغربی کنارے کے اسرائیل سے الحاق کا عمل متاثر ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اب بھی توقع ہے کہ امریکی انتخابات کے نتائج مثبت آئیں گے اور ٹرمپ کامیاب ہو جائیں گے مگر حکومت کو ہرطرح کے حالات کے لیے خود کو تیار رکھنا چاہیے۔ اسرائیلی رکن پارلیمان (کنیسٹ) بزلیئل سموٹریچ نے کہا ہے کہ ٹرمپ کی ناکامی کی صورت میں وزیراعظم نتین یاہو پرنئی امریکی انتظامیہ کی طر سے سخت دبائو آئے گا اور انہیں غرب اردن کے اسرائیل سے الحاق کا پروگرام روکنا پڑ سکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں