امریکا:‌ وزیر کی برطرفی کے بعد پینٹاگون کے اعلیٰ‌ عہدیدار مستعفی –




واشنگٹن: وزیر دفاع کی سبکدوشی کے چند گھنٹوں بعد پینٹاگون کے اعلیٰ عہدیدار نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق پینٹاگون کے اعلیٰ عہدیدار جیمز اینڈریسن نے ناگزیر وجوہات کی بنا پر استعفیٰ دیا، وہ قائم مقام انڈر سیکریٹری آف ڈیفنس فار پالیسی کے عہدے پر کام کررہے تھے۔

وزارت دفاع نے جیمز اینڈریسن کے استعفے کی تصدیق کردی البتہ عہدہ چھوڑنے کی وجوہات سامنے نہیں آسکیں۔ سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ ’ممکن ہے ٹرمپ نے پینٹاگون کے اعلیٰ عہدیدار کو مستعفی ہونے کی ہدایت کی ہو‘۔

واضح رہے کہ چند گھنٹوں قبل امریکی صدر ٹرمپ نے امریکی سکریٹری برائے دفاع مارک ایسپر کو برطرف کیا تھا۔  سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر کو برطرف کردیا گیا ہے، ان کی جگہ کرسٹوفر ملر کو قائم مقام وزیر دفاع مقرر کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال تئیس جولائی کو امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وزارت دفاع کے سینیئر ترین اہلکار مارک ایسپر کو نیا وزیر دفاع بنانے کا اعلان کیا تھا۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں