لائیو ویڈیو کے دوران ایک شخص نے خود کو آگ لگا دی




مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں حکومتی بدعنوانیوں پر ایک شخص نے احتجاجاً خود کو آگ لگا لی اور واقعے کی پوری ویڈیو سوشل میڈیا پر لائیو دیکھائی۔

دل دہلا دینے والا واقعہ شہر کے وسط میں واقع مشہور تحریر اسکوائر میں پیش آیا جہاں حکومتی کرپشن کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے ادھیڑ عمر شخص نے خودسوزی کی کوشش کی۔

محمد حسینی نامی شخص دن دیہاڑے تحریر اسکوائر پر چیختا چلاتا رہا اور حکومت کو چور قرار دیتا رہا۔ وہ چیخ چیخ کررہا تھا کہ حکومت چور ہے، کرپٹ ہے، مصر دنیا کا امیر ترین ملک ہے لیکن یہ چوروں کے ہاتھ میں آگیا ہے، حکومتی کرپشن کی وجہ سے ملک تباہی کی طرف ہے۔

“يا بلدنا يا تكية ماسكينك شوية حرامية”مواطن يضرم النار في جسده بميدان التحرير بعد فصله من العمل وتهديده بالسجن لكشفه قضايا فساد pic.twitter.com/Ral7nciOVs

— شبكة رصد (@RassdNewsN) November 12, 2020

خودسوزی سے قبل وہ شخص فیس بک پر لائیو ویڈیو چلاتا رہا اور یہ 20 منٹ کی ویڈیو اس وقت ختم ہوئی جب اس نے خود کو پیٹرول چھڑک کر آگ لگائی۔

قریبی عمارت سے بنائی گئی ایک ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ آگ لگانے کے بعد وہ شخص زمین پر گرِ جاتا ہے اور قریب کھڑے سیکورٹی گارڈز اس کی مدد کو لپکتے ہیں، اسی اثنا میں پانی کے ٹینک سے پائپ کے ذریعے پانی سے آگ بجھائی جاتی اور جھلسے ہوئے شخص کو اسپتال منتقل کیا جاتا ہے۔

فيديو المواطن المصري اللي حرق نفسه في ميدان التحرير 😔😔 pic.twitter.com/BNMvrmW2Ly

— Noha Abdo (@NohaAbd02779097) November 12, 2020

حکام نے واقعے پر کوئی ردعمل نہیں دیا البتہ جھلسا ہوا شخص اسپتال میں زیر علاج ہے۔بتایا گیا ہے کہ کچھ عرصے قبل ہی یہ شخص جیل سے رہا ہو کر آیا تھا۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں