سعودی عرب میں ملازمین کی تنخواہ مقرر




ریاض: سعودی عرب میں ملازمین کی کم سے کم تنخواہ 3 ہزار سے بڑھا کر 4 ہزار ریال کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی وزیر افرادی قوت انجینئر احمد بن سلیمان الراجحی نے نجی شعبے میں کام کرنے والے سعودی شہریوں کی کم سے کم تنخواہ 3 ہزار سے بڑھا کر 4 ہزار ریال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیر افرادی قوت کے فیصلے کے بعد نطاقات پروگرام میں سعودی ملازم کی بھرتی اس وقت تصور کی جائے گی جب اسے کم سے کم 4 ہزار ریال ماہانہ تنخواہ دی جائے گی۔

عرب میڈیا کے مطابق فیصلے کے بعد کم سے کم 3 ہزار ریال تنخواہ لینے پر نطاقات پروگرام میں آدھا ملازم شمار ہوگا، اسی طرح تین ہزار ریال سے کم تنخواہ دینے پر نطاقات پروگرام میں سعودی ملازم کی بھرتی شمار نہیں ہوگی۔

وزارت افرادی قوت کے مطابق جس کارکن کی تنخواہ 3 ہزار ریال سے زیادہ اور 4 ہزار سے کم ہے اسے بھی نطاقات پروگرام میں آدھا ملازم شمار کیا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق کم سے کم تین ہزار ریال تنخواہ لینے والے ملازم کا نطاقات میں آدھے ملازم کے طور پر شمار اس وقت ہوگا جب اس کی سماجی انشورنس فیس ادا کی جائے گی۔

علاوہ ازیں جو سعودی ملازم لچکدار ڈیوٹی اوقات کے مطابق کام کرتے ہیں وہ اگر 168 گھنٹے مکمل کرلیں تو انہیں نطاقات میں ایک تہائی ملازم شمار کیا جائے گا۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں