لاکھوں مالیت کے ماسک چُرانے پر 6 غیرملکیوں کو قید کی سزا –




دبئی : گودام سے بڑی تعداد میں ماسک چرانے والے6ملزمان کو دبئی کی عدالت نے تین تین سال قید کی سزا سنا دی، ملزمان کا تعلق پاکستان سے ہے،

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزمان کو ڈیڑھ لاکھ درہم مالیت کے ماسک چُرانے پر تین تین سال قید کی سزا سُنا دی گئی ہے، سزا کی مُدت پوری ہونے کے بعد انہیں فوراً ڈی پورٹ کر دیا جائے گا۔

ملزمان کی عمریں 24 سے 45 سال کے درمیان ہیں۔ استغاثہ کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ ملزمان نے رات کے وقت راس الخور کے انڈسٹریل ایریا میں واقع ایک گودام میں گھُس کرماسک کے156ڈبے چُرا لیے، ہر ڈبے میں ایک ہزار ماسک تھا۔

چُرائے گئے ماسک کی مجموعی مالیت ڈیڑھ لاکھ درہم سے زائد تھی۔ ملزمان نے گودام کا تالہ توڑنے کے لیے ہتھوڑے اور نوکیلے اوزاروں کی مدد لی۔

صبح کے وقت جب گودام کا 38 سالہ چینی ملازم ڈیوٹی پر آیا تو خالی گودام دیکھ کر اس کے ہوش اُڑ گئے، اس نے فوری طور پر مالک کو اطلاع دی جس کے بعد 18 جون 2020ء کو وقوعہ کے روز ہی نامعلوم ملزمان کے خلاف الرشیدہ پولیس اسٹیشن میں چوری کا مقدمہ درج کرا دیا گیا۔

پولیس نے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے تمام ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ تاہم وہ یہ ماسک ایک بنگلہ دیشی باشندے کو سستے داموں فروخت

کر چکے تھے۔ جس سے یہ ماسک بازیاب کروائے گئے۔ جبکہ واردات میں استعمال ہونے والا ہتھوڑا اور دیگر آلات بھی برآمد کر کے عدالت میں پیش کیے گئے۔

پولیس کے مطابق ملزمان نے پہلے بھی کئی وارداتوں میں ملوث ہونے کا انکشاف کیا۔ عدالت نے ثبوتوں کو سامنے رکھتے ہوئے تمام ملزمان کو 3،3 سال قید اور ڈی پورٹ کیے جانے کی سزا سُنا دی ہے، ملزمان کو فیصلے کے خلاف پندرہ روز میں اپیل کا حق دیا گیاہے۔

Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں