برطانوی شاہی محل کے ملازم میں کرونا وائرس کی تصدیق کے بعد ملکہ برطانیہ قرنطینہ میں چلی گئی ہیں .




برطانوی شاہی محل کے ملازم میں کرونا وائرس کی تصدیق کے بعد ملکہ برطانیہ قرنطینہ میں چلی گئی ہیں۔
خبر رساں اداروں کی جانب سے جاری رپورٹس کے مطابق چند روز قبل شاہی محل میں خدمات سر انجام دینے والے ملازم میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی، جس کے بعد ملکہ برطانیہ شاہی محل بکنگھم پیلس چھوڑ کر ونڈسر کیسل چلی گئی ہیں۔

شاہی محل کے ترجمان کے مطابق محل میں تقریباً 500 کے قریب ملازم موجود ہیں، جب کہ کرونا وائرس سے متاثرہ ملازم نے گزشتہ ہفتوں میں جس سے بھی ملاقات کی تھی سب نے خود کو قرنطینہ کر لیا ہے۔ کرونا وائرس کی تصدیق کی خبر اس وقت منظر عام پر آئی جب بکنگھم پیلس کے ترجمان نے بیان جاری کیا کہ کرونا وائرس کے پیش نظر برطانوی ملکہ الزبیتھ دوم نے بکنگھم پیلس چھوڑ دیا ہے اور وہ ونڈسر کیسل منتقل ہوگئی ہیں۔
بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ ملکہ برطانیہ اور پرنس فلپ کی صحت اچھی ہے، تاہم کرونا کے پیش نظر انہوں نے خود کو قرنطینہ میں بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل نے بھی شاہی محل کے معاملات کو دیکھنے والے تجزیہ نگاروں کے حوالے سے بتایا ہے کہ برطانوی وزارت صحت پہلے ہی اعلان کرچکی ہے کہ جن افراد کی عمر 70سال سے زائد ہے وہ کرونا وائرس کا شکار نہ ہونے کے باوجود خود کو قرنطینہ کردیں۔ دونوں کی ونڈسر کیسل منتقلی کے بعد قوی امکان ہے کہ شہزادہ چارلس عارضی طور پر بادشاہت کے فرائض سر انجام دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں