بھارتی عوام کی بے حسی، کرایہ دار ڈاکٹروں کو گھروں سے بے دخل کر دیا




انٹرنیشنل ڈیسک: (30 مارچ 2020) بھارت میں بے حسی اور نفسانفسی کی انتہا ہوگئی۔ کورونا وائرس کے مریضوں کا علاج کرنے والے ڈاکٹرز کو ان کے مالک مکان گھروں سے بے دخل کرنے لگے۔ ڈر یہ ہے کہ کہیں ان کے مکانات میں وائرس نہ آ جائے۔ متعدد ڈاکٹرز گھروں سے بے دخلے کے بعد اسپتال کے فرش پر سو رہے ہیں۔

برطانوی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق بھارتی ڈاکٹرز اس وقت عجیب صورتحال کا شکار ہیں۔ ان کے مالک مکان اور پڑوسی کسی صورت ان کا وجود برداشت نہیں کررہے ۔ کئی ڈاکٹرز جو کورونا وائرس کے خلاف لڑ رہے ہیں انہیں مکان خالی کرنے کا حکم سنا دیا گیا ہے۔ اسی طرح ٹیکسی ڈرائیورز بھی انہیں منزل تک نہیں پہنچاتے۔

تنگ نظر اور بے حس بھارتی یہ کہہ کر ان مسیحاؤں کو گھروں سے بے دخل کررہے ہیں کہ چونکہ وہ کورونا سے متاثرہ مریضوں کا علاج کررہے ہیں تو کہیں اپنے ساتھ ان گھروں میں اس وائرس کو نہ لے آئیں جس کے نتیجے میں وہ بھی اس مرض کا شکار ہوجائیں۔ صورتحال اس قدر خراب ہے کہ کئی ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ ، ہسپتال کے فرش یا بیت الخلا میں رہنے پر مجبور ہیں۔ ڈاکٹرز کی تنظیم نے مرکزی حکومت سے التجا کی ہے وہ اس مسئلے کو حل کرنے کے لیے مدد کریں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں