پاکستان اور پنجاب حکومت کے اقدامات قابل تعریف ہیں ، گلف نیوز




نیوز ڈیسک: (3 اپریل 2020) خلیجی اخبار گلف نیوز نے ایک بار پھر کورونا وائرس کے خلاف پاکستانی اقدامات کو تعریف و توصیف کی نگاہوں سے سراہا ہے۔ کالم نگار مہر تارڑ لکھتی ہیں کہ وزیراعظم عمران خان کے ٹائیگر فورس کے اعلان کے بعد ہر پاکستانی نوجوان میں ایک نیا جوش و جذبہ ہے۔ عزم یہی ہے کہ لاک ڈاؤن ہو تو کوئی بھی پاکستانی بھوکا نہیں سوئے۔

خوبصورت انداز میں پاکستانی حکومت کی کاوشوں کو قدر کی نگاہوں سے جانچا گیا ہے۔ مضمون نگار مہر تارڑ کے مطابق معاشی طور پر کمزور ملک کی قیادت کی صلاحیتوں کا امتحان بحران کے وقت پرکھا جاتا ہے۔عمران خان چاہتے ہیں کہ سبھی پاکستانی محفوظ رہنے کے ساتھ ساتھ معاشی طور پر بھی خوش حال رہیں۔ اسی لیے لاک ڈاؤن کے باوجود انہیں ہر پاکستانی کے مستقبل کی فکر ستا رہی ہے اور یہی ان کی اولین ترجیح بھی ہے۔ وزیراعظم کی نیت اور ارادہ صاف ہے۔ وزیراعظم کے اعلان کردہ امدادی پیکج سے جہاں غریب عوام کو سہارا لے گا۔ وہیں کورونا وائرس کے منفی اثرات کو دور کرنے میں مقامی صنعت کو بھی اس سے مدد ملے گی۔

وزیراعطم دو ٹوک لفظوں میں یہی کہتے ہیں کہ لاک ڈاؤن اس وقت تک کامیاب نہیں ہوگا جب تک ہم عوام کو ان کے گھروں میں کھانا مہیا نہیں کریں گے۔ اسی مقصد کو پاکستان کے لیے ٹائیگر فورس بنائی جارہی ہے تاکہ کوئی پاکستانی بھوکا نہ سوئے۔

وزیراعظم کے نقش قدم پر چلتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی دس ارب روپے کا امدادی پیکج کا اعلان کرکے غریب عوام کے دل جیت لیے۔کورونا وائرس کے علاج میں مصروف طبی عملے کو ایک ماہ کی اضافی تنخواہ دی جارہی ہے ۔ یہی نہیں وزیراعلیٰ کے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر صوبے میں کورونا کیسز کی معلومات باقاعدگی سے اپ ڈیٹ ہوتی ہے۔

عثمان بزار کی نگرانی میں نو دن کے ریکارڈ عرصے میں ایکسپو سینٹر میں ہزار بستروں کا کورونا وائرس فیلڈ اسپتال کا قیام قابل تحسین عمل ہے۔ یہ کہا جائے تو غلط نہیں ہوگا کہ پنجاب حکومت بیان بازی نہیں بلکہ عملی اقدامات کررہی ہے جس کے مثبت نتائج آرہے ہیں۔

صوبائی وزیراطلاعات فیاض الحسن چوہان تواتر کے ساتھ ذرائع ابلاغ سے رابطے میں ہیں ۔ اور انہوں نے ایک ایسی پالیسی اپنائی ہے جو مستقبل میں پنجاب ہی نہیں پاکستان کے لیے فائدہ مند ثابت ہوگی درحقیقت وزیراعظم عمران خان ، وفاقی کابینہ اور پنجاب حکومت باخبر ہے کہ پاکستانی خوف زدہ ہیں لیکن انہیں بے فکر ہوجانا چاہیے کیونکہ پوری قیادت ان کے ساتھ کھڑی ہے۔ ایک بہتر منصوبہ بندی اور حکمت عملی کے ذریعے اس کورونا وائرس کو شکست دینے کے لیے ہر پاکستانی بھی حکومت کے ساتھ قدم سے قدم بڑھا رہا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں