امریکی خام تیل کی قیمت 92 فیصد گر گئی، فی بیرل دو ڈالر سے بھی نیچے




نیو یارک: (20اپریل 2020) عالمی منڈی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو ایک مرتبہ پھر بڑا جھٹکا لگا ہے، ایک روز میں امریکی خام تیل کی قیمت 92 فیصد گر گئی ہے۔جس کے بعد امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ملک بھر میں 25 روپے تک تیل کی قیمتیں کم ہو سکتی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق دنیا بھر میں کورونا وائرس کے باعث تیل کی قیمتوں میں زبردست گراوٹ دیکھنے کو مل رہی ہے، اس دوران سعودی عرب، روس کے درمیان تیل کی قیمتوں پر ہونے والی کشیدگی کے باعث پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں زبردست کمی دیکھی گئی تھی جس کے بعد دونوں ممالک میں ’ڈیل‘ ہوئی تھی، دو روز قبل تیل کی قیمتوں میں اضافہ بھی دیکھنے کو ملا تھا۔

تاہم اب مزید خبریں آئی ہیں کہ عالمی منڈی میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو ایک مرتبہ پھر بڑا جھٹکا لگا ہے، ایک ہی روز کے دوران امریکی خام تیل کی قیمت 92 فیصد نیچے گر گئی ہے جس کے بعد امریکی خام تیل 1.38 امریکی ڈالر فی بیرل پر فروخت ہونے لگا ہے۔

ماہرین کے مطابق امریکا میں تیل کی قیمتیں گرنے کی سب سے بڑی وجوہات میں سے ایک تیل محفوظ کرنے کی گنجائش کا نہ ہونا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں