امریکا میں لاک ڈاؤن کے باعث بے روزگاری بڑھ گئی




واشنگٹن: (30 اپریل 2020) امریکا میں لاک ڈاؤن کے باعث بے روزگاری بڑھ گئی اور اب تک بے روز گاروں کی تعداد تین کروڑ سے زائد ہوگئی جبکہ چیف ڈاکٹر انتھونی فاسی کہتے ہیں کورونا وائرس کی نئی دوا کی آزمائش جاری ہے۔

لاک ڈاؤن کے باعث امریکا میں کاروبار بند ہوگیا اور کروڑوں افراد بے روزگار ہوگئے ہیں۔ رواں ہفتےچونتیس لاکھ افراد نے بے روزگاری الاؤنس حاصل کرنے کے لئے فام جمع کرایا جبکہ بے روزگاروں کی تعداد تین کروڑ سے زائد ہوگئی۔

امریکاکے چیف میڈیکل ڈاکٹر انتھونی فاسی نے واشنگٹن میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہاکہ کورونا وائرس کی ویکسین کی جلد منظوری مل جائے گی۔ ویکسین کے انسانوں پر تجربات جاری ہیں اور انہیں امید ہے کہ ویکسین کے نتائج مثبت آئیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں