حریت کانفرنس کے رہنما محمد اشرف صحرائی کے بیٹے جنید صحرائی اور ان کے ساتھی شہید




سری نگر: (19 مئی 2020) مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے حریت کانفرنس کے رہنما محمد اشرف صحرائی کے بیٹے جنید صحرائی اور اس کے ساتھی کو شہید کردیا۔ کرفیو اور پابندیوں کے باوجود نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی جبکہ احتجاج پر فوج کی فائرنگ اور لاٹھی چارج میں متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے۔

کشمیری میڈیا کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے کرفیو اور پابندیوں کے باوجود محمد اشرف صحرائی نے اپنے بیٹے جنید صحرائی کی نماز جنازہ سرینگر میں گھر کے باہر پڑھائی اور اس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔تدفین کے بعد ہزاروں افراد نے بھارتی فوج کے خلاف احتجاج کیا۔ آزادی کے نعرے لگائے اور فوج کو واپس بیرکوں میں بھیجنے کا مطالبہ کیا۔

قابض فوج نے مظاہرین پر فائرنگ، شیلنگ اور لاٹھی چارج کیا تو جھڑپیں شروع ہوگئیں۔ جھڑپوں میں متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے۔ اس سے پہلے بھارتی فوج نے مقبوضہ سرینگر کے علاقے نواکدل میں سرچ آپریشن کے دوران جنید صحرائی اور اس کے دوست طارق احمد کو فائرنگ کرکے شہید کردیا۔

بھارتی فوج نے آپریشن کے دوران علاقے کے سترہ گھروں کو بھی مکمل طور تباہ کردیا اور گھروں سے نقدی، زیورات اور دیگر قیمتی سامان بھی لوٹ لیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں