بھارتی ملٹری قیادت اور دوول گروپ میں شدید اختلافات




نئی دہلی: (29 مئی 2020) بھارت ہر محاذ پر بری طرح ناکام ہوگیا۔ پہلے پلوامہ کا ناکام ڈرامہ، پھر بالاکوٹ کی جعلی سرجیکل اسٹرائیک، کوویڈ 19 کے دوران ناکام پالیسی اور اب چین کے ہاتھوں تازہ ہزیمت کے بعد بھارتی ملٹری قیادت اور اجیت دوول گروپ میں شدید اختلافات پیدا ہوگئے ہیں۔

بھارتی ملٹری قیادت نے اجیت دوول کی پالیسی کو ناکام قرار دے دیا۔ بھارتی ملٹری قیادت اور دوول گروپ میں اختلافات شدت اختیار کرگئے۔

بھارتی ملٹری قیادت کا کہنا ہے کہ دوول کی غلط پالیسیوں نے بھارت کو بند گلی میں لا کھڑا کیا ہے۔ چائنہ پالیسی اور جھوٹ پر جھوٹ نے بھارت کی بنیادیں ہلا دیں، نتیجہ بھارت اقوامِ عالم میں تنہا ہوگیا۔ پہلے پلوامہ ڈرامے میں اپنے 40 سپاہی مروائے، بالاکوٹ میں ہزیمت اُٹھانا پڑی، بھارتی ایئر فورس کی ناکامی سے بھارتی خواب چکنا چور ہوئے۔ کشمیر پالیسی بری طرح ناکام ہوچکی جبکہ چائنہ نے بھارتی ملٹری کو بے نقاب کردیا۔ دوول پالیسیوں کی وجہ سے افواج متنازعہ بن گئی جبکہ بپن راوت نے اپنے عہدے کیلئے افواج کو سیاسی بنا دیا۔

دوسری جانب پاکستان نے کرتار پور راہداری کے ذریعے بھارت کی منافقت کو دفن کردیا۔ بھارت کی ہر مسئلے اور حادثے کا الزام پاکستان پر عائد کرنے کی پالیسی عالمی طاقتوں نے مسترد کردی۔ بھارت گھٹنے ٹیکنے پر مجبور ہوگیا۔

نیویارک ٹائمز بھی اپنی حالیہ رپورٹ میں مودی کا پول کھول چکا ہے جس میں مودی کی کوویڈ پالیسی کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا گیا کہ بھارتی عوام کا حکومت پر اعتماد کھو چکا ہے۔ سخت لاک ڈاؤن کے باوجود بھارت میں کورونا کیسز اور اموات کی شرح بہت زیادہ رہی۔

رپورٹ میں بھارت میں طبقاتی تفریق پر تنقید کی گئی اور قرار دیا گیا کہ مودی کا ہندوستان صرف امیروں کیلئے ہے۔ بھارت میں کاسٹ سسٹم واضح نظر آتا ہے۔ چھوٹی کاسٹ، اقلیتوں کو کورڈ میں بے یارو مددگار چھوڑ دیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں