کان پور میڈیکل کالج کی پرنسپل کا مسلمانوں کیخلاف متعصبانہ بیان




کان پور: (2 جون 2020) بھارت میں تنگ نظری اور متعصبانہ سوچ کا ایک اور واقعہ۔ کان پور میڈیکل کالج کی پرنسپل نے ہندو توا دہشت گردی کی عکاسی کردی ۔ کہتی ہیں کہ تبلیغی جماعت والے کورونا پھیلا رہے ہیں ، ان دہشت گردوں کا علاج کرانے کے بجائے مار دینا چاہیے۔

ڈاکٹر آرتی لال چندانی کی یہ ویڈیو وائرل ہوگئی ہے۔ جس میں وہ آر ایس ایس کی سوچ کا پرچار کررہی ہیں ۔ دوسرے انتہا پسندوں کی طرح کورونا وائرس پھیلانے کا الزام تبلیغی جماعت والوں پر لگاتی ہیں۔ کہتی ہیں کہ ان کا علاج کرانے کے بجائے یا تو انہیں جنگل میں پھینک دیا جائے یا پھر سلاخوں کے پیچھے۔

بھارتی مسلمان برائے ترقی و اصلاح نامی تنظیم نے کان پور میڈیکل کالج کی پرنسپل کی اس اشتعال انگیزی پر شدید احتجاج کرتے ہوئے مرکزی وزیر صحت سے مطالبہ کیا ہے کہ ڈاکٹر آرتی لال کو فوری طور پر عہدے سے ہٹایا جائے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں