امریکی ریاست ٹینیسی میں مظاہرین نے ایڈورڈ کارمک کا مجسمہ گرا دیا




ٹینیسی: (5 جون 2020) امریکا میں سیاہ فام کے قتل اور نسلی امتیاز کے خلاف مظاہروں کے دوران ریاست ٹینیسی میں مظاہرین نے سفید فام ڈیموکریٹک پارٹی کے سینیٹر ایڈ ورڈ کارمک کے مجسمے کو گرادیا۔

امریکی سیاستدان کا مجسمہ انیسویں صدر سےقائم تھا۔ امریکی سیاستدان ایڈورڈ وارڈ کارمیک انیسویں صدی میں ایک اخبار کے ایڈیٹر اور سینیٹر تھے۔ جن کو انیس سو آٹھ میں امریکی ریاست ٹینیسی کے شہر نیش ول کی گلیوں میں گولی مار کر ہلاک کیا گیا تھا۔ امریکی سینٹر ایڈورڈ وارڈ کارمیک کا کانسی کا مجسمہ نینسی کاکس میکورک نے انیس سو چوبیس میں ڈیزائن کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں