مقوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے دس ماہ میں 142 کشمیری شہید کر دیئے




سرینگر: (5 جون 2020) آل پارٹیز حریت کانفرنس نے مقبوضہ کشمیر کی آزادی کے لئے جدوجہد جاری رکھنے کا عہد کیاہے جبکہ قابض فوج نے دس ماہ کے لاک ڈاؤن کے دوران ایک سو بیالیس کشمیری شہید کردئے۔

کشمیری میڈیا کے مطابق آل پارٹیز کانفرنس کا اجلاس سرینگر میں ہوا۔ اجلاس میں اس عہد کو دہرایا گیاکہ حریت کانفرنس اقوام متحدہ کی قراردادوں اورعاالمی قوانین کے تحت مقبوضہ کشمیر کے حق خود ارادیت کے لئے جدوجہد جاری رکھے گی۔ اے پی ایچ سی نے مجلس شورا کے اجلاس کے دوران سیدعلی گیلانی کی ہدایت پر تنظیم کی آزادی کے لئے جدوجہد کا جائزہ لیا۔

حریت کانفرنس کی جانب سے جاری بیان میں کہاگیا کہ بھارت نے سید علی گیلانی کو برسوں سے مسلسل گھر میں قید رکھا ہواہے اور اجلاس ان کی شرکت کے بغیر ہوا۔ بھارتی پابندیوں اور خراب صحت کے باعث علی گیلانی اجلاس میں شرکت نہیں کرسکے۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیاکہ مقبوضہ کشمیر کے حق خود ارادیت کے لئے وادی کے اندر اور باہر سفارتی سرگرمیاں بڑھائی جائیں گی۔

حریت رہنماؤں نے اجلاس میں فیصلہ کیا کہ وہ کشمیرکاز کے لئے جدوجہد جاری رکھیں گے۔ بھارت نےمقبوضہ کشمیر کی خودمختاری پانچ اگست کو ختم کی تھی اور کشمیر کو دو حصوں میں تقسیم کردیا تھا۔ مقبوضہ وادی میں بھارتی لاک ڈاؤن کو دس ماہ گزرگئے۔ تاحال لاک ڈاؤن جاری ہے۔ بھارتی فوج نے اس عرصے کے دوران ایک سو بیالیس کشمیریوں کو گھر گھر آپریشن اور مظاہروں پر فائرنگ کرکے شہید کیا. جبکہ سیکڑوں کو زخمی بھی اور ان گنت کو گرفتار بھی کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں