درس حدیث : تسبیح فاطمہ – صحیح بخاری 5361




ایک بار حضرت فاطمہؓ نبی کریم ﷺ کی خدمت میں یہ شکایت کرنے لئے احاضر ہوئیں کہ چکی پیسنے کی وجہ سے ان کے ہاتھوں میں کتنی تکلیف ہے ۔
انہیں معلوم ہوا تھا کہ نبی کریم کے پاس کچھ غلام آئے ہیں لیکن نبی کریم ﷺ سے ان کی ملاقات نہ ہو سکی ۔ اس لیے عائشہ ؓ سے اس کا ذکر کیا ۔ جب آپ ﷺ تشریف لائے توعائشہ ؓ نے آپ سے اس کا تذکرہ کیا۔ علی ؓ نے بیان کیا کہ پھر نبی کریم ﷺ ہمارے یہاں تشریف لائے ہم اس وقت اپنے بستروں پر لیٹ چکے تھے ہم نے اٹھنا چاہا آپ ﷺ نے فرمایا کہ تم دونوں جس طرح تھے اسی طرح رہو۔ پھر نبی کریمﷺ میرے اور فاطمہ ؓکے
درمیان بیٹھ گئے ۔ میں نے آپ کے قدموں کی ٹھنڈک اپنے پیٹ پر محسوس کی ۔ پھر آپﷺ نے فرمایا تم دونوں نے جو چیز مجھ سے مانگی ہے، کیا میں تمہیں اس سے بہتر ایک بات نہ بتا دوں ؟ جب تم ( رات کے وقت ) اپنے بستر پر لیٹ جاؤ تو 33 مرتبہ « سبحان الله، ‏‏‏‏ 33 مرتبہ « الحمد الله اور 34 مرتبہ« الله اكبر پڑھ لیا کرو یہ تمہارے لیے لونڈی غلام سے بہتر ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں