چھٹیوں میں کیا کریں۔۔۔؟ – شہزین خان




کرونا وائرس کی وجہ سے چھٹیاں ہو گئیں تھیں ۔۔۔۔ اور ہم بہت پریشان تھے کیونکہ ہمارے پیپرز تھے ۔۔!
ساری تیاری تھی ۔ اور ان چھٹیوں کی وجہ سے وہ کینسل ہو گئے۔ ہمارے پاس چھٹیوں میں کرنے کے لیے کچھ نہ تھااور ہم روز اٹھتے ۔۔۔۔ کھاتے اور سو جاتے ۔۔۔۔۔۔ اٹھنا ، کھانا اور سوجانا روز کا معمول بن گیا تھا ۔۔۔ لاک ڈاون کی وجہ سے ہم کہیں باہر بھی نہیں جاسکتے تھے تو کہیں گھمنا پھرنا بھی نہیں تھا ۔۔۔۔
اس طرح ہم نے گھر میں چھوٹے چھوٹے کام کرنے کی کوشش کی اور بڑوں کی خدمت کا موقع بھی ملا ۔۔۔۔۔ ساتھ ہی ہم نے گھر میں چھوٹے چھوٹے پودے لگانے کا سوچا لیکن ۔۔۔۔ مارکیٹیں بند تھیں ۔۔۔۔۔ اس وجہ سے ہم نے گھر سے ہی دھنیے اور املی کے بیج لے کر ان کو مٹی میں بویا ۔۔۔۔۔ ساتھ ہی رات کو بھی بوریت بھگانے کے لیے سوچا کہ بابا سے کہہ کر لوڈو منگوایا جائے ۔۔۔۔ اور کچھ گھر میں ہی کھیلنے کی کوشش کی جائے۔۔۔۔!
اس طرح ہم رات میں روز سب ساتھ بیٹھ کر لوڈو کھیلتے ہیں ۔ اور ہمیں گھر میں ساتھ بیٹھ کر باتیں کرنے کا موقع ملا ورنہ سب اپنے اپنے کاموں میں مگن ہوتے تھے ۔۔۔۔۔ اس طرح ہماری چھٹیاں اچھی سی گرزنے لگیں ۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں