عیدین اور شکرگزاری – عاصمہ ناز




اللہ تعالیٰ نے سال میں دو اسلامی تہوار ، عید الفطر اور عیدالاضحی عطا کیے ہیں . جن میں ہمیں رب کی کبریائی اور شکر ادا کرنے کی تلقین کی گئی ہے . سال 2020 آیا تو کسی کے وہم وگمان میں بھی نہ تھا کہ ہمارا واسطہ ایسے وائرس سے پڑے گا …… جو ساری دنیا کو زچ کردے گا .
لیکن اس وائرس سے ہم نے بہت کچھ سیکھا . یہاں خاص طور پر عیدین کا ذکر کریں گے جو ہمیں شکر اور رب کی کبریائی یاد کرواتی ہیں. اس سے پہلے ہم روٹین کی زندگی گزار رہے تھے . عیدیں آتی تھیں اور گزر جاتی تھیں …… شکر کا جذبہ اور نہ ہی رب کی کبریائی کا احساس جاگتا تھا لیکن اس کرونا نے شکر کے ساتھ سادگی کا درس دیا . اللہ تعالیٰ نے ہمیں سکھایا کہ اسلامی تہوار اور دوسری تقریباًت کو سادگی اور شکر کے جذبے کے ساتھ منایا جا سکتا ہے ۔ عام حالات میں ہم رب کا کم ہی شکر ادا کرتے ہیں نہ تو اپنی ذات پر اور نہ ہی اپنے اطراف پر نظر ڈالتے ہیں . کہ ہمیں رب کی نعمتوں کا احساس ہو لیکن اس وبا نے ہمیں احساس دلایا کہ اللہ کی کتنی نعمتیں ہیں . جن کو سوچے سمجھے بغیر استعمال کرتے ہیں اور شکر ادا نہیں کرتے اور نہ ہی رب کی کبریائی کا احساس جاگتا ہے۔
عیدالاضحی جو خاص طور پر قربانی کا سبق دیتی ہے اس نے ہمیں احساس دلایا کہ ہم نے آپنی وہ خواہشات جن کے بغیر بھی زندگی گزر سکتی تھی کو قربان کرنا ہے اور شکر ادا کرتے ہوئے سادگی سے رہنا ہے اللہ رب العزت سے دعا ہے کہ ہمیں آپنا شکر گزار بندہ بننے کی توفیق عطا فرمائے آمین

اپنا تبصرہ بھیجیں