بیٹیوں کی خوشی کا دن – زبیر منصوری




لوبھلا بتاو؟ کوئی بے خبری سی بے خبری ہے؟آج بیٹیوں کی خوشی کا دن ہے اور ہمیں یاد تک نہیں !
بھئی آج کے دن اپنی جمعیت طالبات کا برتھ ڈےہے ! برتھ ڈے نہیں مناتے؟چلو “یوم تاسیس”! اب خوش؟

مجھے یاد ہے جب برسوں پہلے اپنی سمیہ بتول بیٹی نے فون پر “چچا جان ” کہہ کر مخاطب کیا اور پروگرام کے لئے وقت مانگا تو بڑا اچھا لگا تھا میں نے دعائیں اور شاباش دی ……..بڑی اچھی سی بیٹیاں ہیں ادب ، تمیز ، وقار سبھی کچھ تو سکھایا ہے جمعیت نے انہیں عجیب فتنہ پرور ماحول مین یہ سمٹی لپٹی خود کو بچاتی راستے بناتی مشکل حالات کا مقابلہ کرتی آگے بڑھتی بیٹیاں بڑی بھلی لگتی ہیں . اس جمعیت نے نہایت خاموشی سے کیسی کیسی ہیرے موتی لعل جیسی بہنوں سے تحریک کا دامن بھر دیا ہے۔ مجھے یقین ہے یہ سیکھ رہی ہین ،یہ آگے بڑھین گی یہ غیر ضروری Self imposed barrier توڑ یں گی اپنے دائرے وسیع کریں گی نئے امکانات اور راستے تلاش کریں گی . آپ سب دیکھیں گے یہ بیٹیاں اپنی بہنوں کو شیطان کا اسان چارہ نہیں بننے دیں گیں . یہ بہت آگے جائیں گی۔۔۔۔
اللہ انہیں اپنی عافیت کی پیار بھری چادر میں ڈھانپ لے . اللہ انہیں چیزوں کی گہرائی کا علم دے . اللہ ان کو دل و دماغ کی وسعتوں سے نوازے . اللہ انہیں خوشگوار جذبوں اور ولولوں کے ساتھ حوصلوں امیدوں والا بنا دے . اللہ ان بیٹیوں کو قدر دان اور شفیق بڑوں سے نوازے اور خودان کا طاقتور محافظ بن جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں